Tue 17-07-2018 16:34 PM

چین کی مجموعی ملکی پیداوار امسال کی پہلی ششماہی میں بڑھ کر 6.8 فیصد ہوگئی

بیجنگ، 16 جولائی، 2018 (وام) -- چین کی مجموعی ملکی پیداوار ( جی ڈی پی) میں مسلسل اضافہ ہوا ہے اور یہ 2018 کی پہلی ششماہی میں 6.8 فیصد تک ہہنچ گئی جو 41.90 ٹریلین یوآن (6.27 ٹریلین امریکی ڈالر) بنتی ہے.

چین کے خبررساں کے ادارے شنوا نے اعداد و شمار کے قومی بیورو کے حوالے سے کہا ہے کہ یہ نتائج حکومتی سالانہ پیداواری ہدف 6.5 سے زیادہ ہیں.

چین کی جی ڈی پی اس سال کی دوسری سہ ماہی میں بڑھ کر 6.7 فیصد ہوگئی، جو پچھلے سال کی اسی مدت کے دوران کی 6.8 فیصد کی شرح سے قدرے کم تھی. تاہم مجموعی ملکی پیداوار کی شرح مسلسل بارہویں سہ ماہی میں 6.7 سے 6.9 کے درمیان رہی.

چین کی معیشت میں 2017 کے دوران 6.9 فیصد کا اضافہ ہوا، جو گزشتہ سات سالوں میں ہونے والا سب سے بڑا اضافہ ہے.

بیورو کے ترجمان مائیو شینگ یونگ نے ایک پریس کانفرنس میں بتایا کہ چینی معیشت میں اس سال کی پہلی ششماہی میں بہتری آئی ہے، جو ملک کی اعلی معیار کی ترقی کے لئے ایک "اچھا آغاز " ہے، اس کے علاوہ ترقیاتی تنظیم نو اور بہتر معاشی معیار اور کارکردگی بھی پیش پیش ہیں.

http://wam.ae/en/details/1395302699229

WAM/MOHD AAMIR/Ginny Delafuente

لنک