اٹلی میں اماراتی،اطالوی اور ہسپانوی ڈیزائنر کا کرافٹ ڈائیلاگ منصوبے پر تخلیقی کام


شارجہ،10 جنوری، 2019(وام)۔۔جغرافیائی حدود سے ماورا اور بحیرہ روم کےدونوں اطراف پائے جانے والے فنکارانہ احساسات کو ضم کرنے کے لئے ترقی خواتین کے ادارے :ناما:کی ذیلی تنظیم ارتھی کرافٹ کونسل نے اپنے دستکاری منصوبے کے پہلے مرحلے کے لئے دس آرٹسٹوں اور ڈیزائنرزکا انتخاب کیا ہے جن کا تعلق امارات،اٹلی اور سپین سے ہے۔یہ منصوبہ جس پر بارسلونا کے کری ایٹو ڈائیلاگ کے تعاون سے عملدرآمد کیا جائے گا ،کے لئے امارات کے چار،سپین کے پانچ اور اٹلی سے ایک ڈیزائنر شرکت کرے گا۔امارات سے فاطمہ الزعابی،غایا بن مسمار،عبداللہ الملا اور شیخة بن ظاہر ، بارسلونا میں قائم ڈیزائن سٹوڈیو مرمیلادا اسٹوڈیو کے لارا بلاسکو،جانمی جواریز اور ایلکس اسٹیویز ،بارسلونا کے پیپا ریورٹر،ویلنشیا کے ایڈریان سلویڈور اور وینس کے میٹیو سلویریوکے ساتھ مل کر کام کریں گے۔کرافٹ ڈائیلاگ کا گزشتہ سال نومبر میں عرب امارات کی خواتین کی ترقی کے ادارہ "ناما" کی چیئرپرسن ، ارتھی کرافٹس کونسل کی شاہی سرپرست اور شارجہ کے حکمران کی اہلیہ الشیخة جواہر بنت محمد القاسمی کی موجودگی میں اٹلی میں افتتاح کیا گیا تھا۔جس کا مقصد عرب امارات کی ثقافتی دستکاریوں تالی، صفیفہ اور مٹی کے ظروف کو اٹلی کے مرانو گلاس اور سپین کی چمڑہ دستکاری کے ساتھ اشتراک کرتے ہوئے نئی کولیکشن تیار کرنا ہے۔کولیکشن کے لئے تالی اور صفیفہ کے فن پارے ارتھی کے سماجی ترقی کے پروگرام کی خواتین آرٹسٹ کی جانب سے فراہم کئے جائیںگے۔اٹلی کے مرانوگلاس سے میٹیو سلویریو جبکہ اماراتی چکنی مٹی کے فن پارے فاطمہ الزاعی تیار کریں گی۔جبکہ غایا بن مسمار اور مارمیلادا سٹوڈیو کے ڈیزائنر تالی اور صفیفہ کونفاست کے ساتھ یکجا کریں گے۔تیسری کولیکشن کے لئے پیپا ریورٹر اور عبداللہ الملاا ماراتی صفیفہ اور چکنی مٹی کا اس طرح ملاپ کریں گے کہ جو پہلے کبھی نہ دیکھا گیا ہو۔آخر میں ایدریان سلویڈور اور شیخہ بن ظاہر اپنی کولیکشن کے لئے اپنی فنکارانہ صلاحیتیوں کو بروئے کار لاتے ہوئے تالی کو سپینش چمڑے سے مزین کردیں گے.

 

اس موقع پر ناما کی ڈائریکٹر ریم بن قرام نے کہا کہ بین الثقافتی ڈائلاگ ،مقامی فنون اور دستکاریوں کو تخلیقی مہارتوں کے ملاپ سے نئے انداز سے پیش کرنا کرافٹ ڈائیلاگ منصوبے کا مقصد ہے۔اس منصوبے سے امارات اور یورپ کے آرٹسٹوں کو سیکھنے، ایک دوسرے سے تعاون اور ایک نئے پلیٹ فارم سے تخلیقی صلاحیتوں کے اظہار کا موقع فرام کیا گیا ہے۔ہم ستمبر دوہزار انیس میں عالمی سطح پر اسکی باقاعدہ لانچنگ کا ارادہ رکھتے ہیں.

 

منصوبے کے اغاز کے لئے آرٹسٹ نے شارجہ میں اکٹھے ہوکر مٹی کے ظروف کی فیکٹریوں کا دورہ کیا ڈیزائنرزاور پراجیکٹ ٹیم کے ارکان نے کرافٹ ڈائلاگ پراجیکٹ کے کری ایٹو دائریکٹر اور بانی سامر الیمانی سے ارتھی کرافٹ کونسل میں ملاقات بھی کی۔ اس موقع پر شارجہ بزنس ویمن کونسل کی چیئرمین پرسن شیخة ہند بنت ماجد القاسمی،ناما کی ایگزیکٹو بورڈ کی رکن ندی اللواتی، اور ارتھی کرافٹ کونسل کی ڈیزائنر فرح نصری بھی موجود تھیں۔ڈیزائنر نے امارات کی خواتین آرٹسٹ سے بھی ملاقات کی.

 

ترجمہ۔تنویر ملک.

 

http://wam.ae/en/details/1395302731516

WAM/