قابل تجدید توانائی ایجنسی /ارینا/ کی نویں اسمبلی کل سے ابوظہبی میں ہوگی

ابوظہبی،10 جنوری، 2019(وام)۔۔بین الاقوامی قابل تجدید توانائی ایجنسی (ارینا) کی نویں اسمبلی کل ابوظہبی میں شروع ہوگی جس میں ایک سو ساٹھ ممالک سے سربراہان مملکت وحکومت، ایک سو بیس سے زائد وزرا پائیدا ترقی اور ماحولیاتی اہداف کے لئے قابل تجدید توانائی کے استعمال کو فروغ دینے پر مشاورت کریں گے۔تین روزہ ارینا اسمبلی میں وزارتی سطح کے شرکا کی بڑی تعداد شریک ہورہی ہیں۔پالیسی سازوں میں عالمی تنظیموں،نجی شعبے اور سول سوسائٹی کے اعلی سطح کے نمائندے شامل ہیں۔اسمبلی کا انعقاد ایک ایسے موقع پر ہونے جارہا ہے جب متبادل توانائی کی لاگت میں کمی کے ساتھ اس کے سماجی معاشی فوائد کو تسلیم کیا جارہا ہے اور موسمیاتی تبدیلیوں کے بدترین اثرات سے بچاو کے لئے مطالبات سامنے آرہے ہیں.

 

رواں سال اسمبلی کی صدارت چین کی نیشنل انرجی ایدمنسٹریشن کے نائب صدر لی فان رونگ کریں گے۔اس موقع پر ارینا کے ڈائریکٹر جنرل عدنان زیڈ امین کا کہنا ہے کہ قابل تجدید توانائی صنعتی اور ترقی پزیر معیشتوں کے لئے بھرپور معاشی وسماجی مواقع پیش کرتی ہے۔ارینا کی عالمگیر ممبرشپ اس بات کا ثبوت ہے کہ قابل تجدید توانائی حقیقت میں ایک عالمی ترجیح کی حیثیت اختیار کرچکی ہے.

 

مسٹرلی فان رونگ نے ارینا کی نویں اسمبلی کی صدارت کو اپنے لئے اعزاز قرار دیتے کہا کہ چین نے اپنی معاشی ترقی اور موسمیاتی اہداف کے لئے قابل تجدید توانائی کو اپنی حکمت عملی میں واضح ترجیح دی ہے۔یہ اسمبلی عالمی برادری کواکٹھا ہونے کا ایک اہم موقع فراہم کرے گی۔کانفرنس کے دوران ہر ملک کو قابل تجدید توانائی کو فروغ دینے اور عالمی اہداف کے حصول کے لئے ہرممکن رہنمائی فراہم ہوگی۔ اسمبلی میں قابل تجدید توانائی کی ترقی کے لئے اہمیت کے حامل موضوعات پر کئی ایک مباحثے ہوں گے.

 

اس کے علاوہ اسمبلی میں ہونے والی بات چیت اور تبادلہ خیالات اس کے رکن مندوبین، شراکتی گروپوں اور نجی شعبہ کو تعاون کے مواقع فراہم کریں گے۔اسمبلی میں ایجنسی کے کام کے طریقہ کاراور قابل تجدید توانائی کی ترقی وپیداوار کے حوالے سے ممالک کی کوششوں بشمول توانائی کے پیداواری ذرائع کی تبدیلی اورانرجی ٹرانسفارمیشن سیکٹر میں پن بجلی کے تبدیل ہوتے کردار پر توجہ مرکوز رکھی جائے گی.

 

اسمبلی سولہویں ارینا کونسل کے فیصلوں اور نتائج پر غور کرتے ہوئے مخصوص انتظامی اور ادارہ جاتی امور سے متعلق ہدایات جاری کرے گی.

 

ترجمہ۔ تنویرملک.

 

http://wam.ae/en/details/1395302731548

WAM/