میرا دورہ متحد ہ عرب امارات بین العقائد تعلقات میں نیا باب ثابت ہوگا: پوپ


ویٹی کن سٹی، 31 جنوری 2019 (وام) -- کیتھولک چرچ کے سربراہ پوپ فرانسس نے 3 سے 5 فروری 2019ء کے دورے سے پہلے متحدہ عرب امارات کی قیادت اور عوام کیلئے اپنی نیک خواہشات کا اظہار کیا ہے۔ انکا کہنا ہے کہ متحدہ عرب امارات ایسا ملک ہے جو پرامن بقائے باہمی، انسانیت ، عقائد اور تہذيبوں کے درمیان رابطوں کا ماڈل بننے کی کوشش کررہا ہے.

ویٹکن سے جاری ہونے والے ایک ویڈیو پیغام میں پوپ نے کہا کہ متحدہ عرب امارات ایک ایسا ملک ہے جہاں بہت سے لوگ محفوظ ماحول میں رہ کر اختلافات کا احترام کرتے ہوئے آزادی سے رہ سکتے ہیں۔ انکا کہنا ہے کہ انھیں اس بات کی خوشی ہے کہ وہ وہاں رہنے والے ان لوگوں سے ملیں گے جو اپنے حال میں رہتے ہوئے مستقبل کی طرف دیکھتے ہیں.

متحدہ عرب امارات کے بانی مرحوم شیخ زاید بن سلطان آل نھیان کے قول کا حوالہ دیتے ہوئے پوپ فرانسس نے کہا کہ اس عظیم رہنما نے کہا تھا کہ کسی قوم کا حقیقی اثاثہ اسکے مادی وسائل نہیں بلکہ اسکے عوام ہوتے ہیں جو اپنےمستقبل کی آواز کو سنتے ہیں.

پوپ فرانسس نے اس دورے اور انسانی برادری کے موضوع پر ہونے والے بین المذاہب مذاکرے میں شمولیت کی دعوت دینے پر ابوظبی کے ولی عہد اور متحدہ عرب امارات کی مسلح افواج کے ڈپٹی سپریم کمانڈر عزت مآب شیخ محمد بن زاید ال نھیان کا شکریہ ادا کیا ۔ انھوں نے میں اپنے اس دورے کے حوالے سے میزبانی کے بہترین انتظامات کرنے ، مہمان نوازی اور برادرانہ خیر مقدم پر عرب امارات کے تمام حکام کا بھی شکریہ ادا کیا.

انھوں نے اپنے عزیز دوست اور بھائی جامعہ الازہر کے امام اعظم ڈاکٹر احمد الطیب کا بھی شکریہ ادا کیا۔ ڈاکٹر احمد الطیب بھی انسانی براداری مذاکرے میں حصہ لیں گے.

پو پ فرانسس نے ان تمام لوگوں کا بھی شکریہ ادا کیا جو اس امر پر زور دیتے ہیں کہ اللہ پر یقین ہمیں متحد کرتا ہے نہ کہ تقسیم کرتا ہے.

انھوں نے کہا کہ اختلافات کے باوجود عقیدہ ہمیں متحد کرتا ہے۔ یہ ہمیں دشمنی اور باہمی اختلافات سے دور رکھتا ہے۔ پوپ نے کہا کہ اللہ کے عطا کئے گئے اس موقع پر انھیں خوشی ہے کیونکہ یہ عقائد کے درمیان تعلقات کی تاریخ میں ایک نیا باب ثابت ہوگا.

پوپ فرانسس کا کہنا ہے کہ وہ زاید کے گھر جو خوشحالی، امن، بقائے باہمی اور رابطوں کا گھر ہے میں زاید کے خاندان سے ملنے کے منتظر ہیں.

ترجمہ: ریاض خان

http://wam.ae/en/details/1395302736142

WAM/MOHD AAMIR