متحدہ عرب امارات کاجدید ٹیکنالوجی پر منتقل ہونا قابل تحسین ہے،جرمن وزیر

دبئی،10 فروری، 2019 (وام)۔۔جرمنی کی وزارت اقتصادی امور کے سٹیٹ سیکرٹری برائے بیڈن ورٹمبرگ کیٹرن شواتز نے جدید ٹیکنالوجی اور اختراعات کواپنانے کے حوالے سے متحدہ عرب امارات کے اہم کردار کو سراہا ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے دبئی میں جرمنی کی ٹیکنالوجی کمپنی ایس اے پی(سیپ) کے مشرق وسطی اور شمالی افریقہ کے دبئی میں واقع ہیڈکوارٹرز کے دورہ کے موقع پر کیا۔سیپ یو اے ای میں ان نو سو سے زائد کمپنیوں میں سے ایک ہے جن کے ہیڈکوارٹرز جرمنی میں قائم ہیں۔سیپ دونوں ممالک کی باہمی تجارت کے فروغ میں اہم کردار ادا کرتی ہے جرمنی کے فیڈرل فارن آفس کے اعدادوشمار کے مطابق عرب امارات اور جرمنی کی باہمی تجارت کاحجم پندرہ ارب چالیس کروڑ یورو ہے۔جرمنی کے سرکاری وفد کے اعلی حکام اورسیپ کا کہنا تھا کہ امارات اور جرمنی کے درمیان حکومتی سطح پر ٹیکنالوجی کے شعبہ میں تعاون موجود ہے۔سیپ عرب امارات میں بیس کروڑ ڈالر کے پانچ سالہ سرمایہ کاری منصوبے پر کام کررہا ہے۔یہ صارفین کو بزنس ایپلی کیشن فراہم کرنے والا پہلا ادارہ ہے۔سیپ ایکسپو دوہزار بیس دبئی کا شراکت دار بھی ہے۔ سیپ مستقبل کی جنریشن کی مہارت اور ٹیلنٹ میں اضافہ کرکے ورک فورس کی تیاری میں مدد فراہم کررہا ہے۔دوہزار تیرہ سے ابتک دوہزار تین سو تیس سے زائد بے روزگار یا نیم روزگار افراد نے سیپ سرٹیفائڈ ایسویسی ایٹ کنسلٹنٹ کے طور پر سیپ کے ایکو سسٹم میں ملازمت حاصل کی ہے.

 

ترجمہ۔تنویرملک.

 

http://wam.ae/en/details/1395302738305

WAM/Ahlam Al Mazrooi