ابتدائی نشونما کے بارے میں دبئی اعلامیہ جاری کردیا گیا

دبئی، 10 فروری، 2019 (وام) ۔۔ دبئی میں جاری حکومتوں کے بارے میں عالمی سربراہ اجلاس کے موقع پر Early Childhood Development کے حوالے سے اعلامیہ جاری کردیا گیا ہے۔ یہ اعلامیہ دبئی کیئرز اور یونیسیف کی طرف سے متحدہ عرب امارات کی وزارت خارجہ امور اور بین الاقوامی تعاون کے اشتراک سے جاری کیا گیا ہے۔ اعلامیہ اس بڑھتے ہوئے سائنسی اتفاق رائے کے جواب میں ہے کہ بچوں کی ابتدائی نشونما زندگی بھر ان کے ذہنی اور جذباتی تجربات پر اثرانداز ہوتی ہے.

 

متحدہ عرب امارات نے اعلامیے کو سراہا ہے جس میں بچوں کی ابتدائی زندگی پر عالمی سرمایہ کاری میں تیزی لانے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔ بین الاقوامی تعاون اور دبئی کیئرز کی چیرپرسن ریم بنت ابراہیم نے کہا کہ بچے کو اسکے ابتدائی دنوں میں بہترین آغاز صحت مند اور خوشحالی افراد، معاشرے اور قوم کو یقینی بنانے کا بہترین طریقہ ہے.

 

اعلامیے میں بچوں اور ان کی نگہداشت کرنے والوں کے لئے خدمات کے مجموعی پیکج کے لئے عناصر اور نقطہ نظر کی نشاندہی کرتا ہے۔ اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ یہ اقدامات نیشنل پالیسی اور قواعد و ضوابط کے تحت ہونے چاہیں تاکہ ریاست کے ساتھ نجی شعبہ بھی اس شعبے میں سرمایہ کاری کرسکے.

 

دبئی کیئرز کے چیف ایگزیکٹو آفیسر طارق الگرگ نے کہا کہ خارجہ امور اور بین الاقوامی تعاون کی وزارت اور یونیسف کے ساتھ مل کر دبئی اعلامیے کو لکھنا بچوں کی ابتدائی نشونما کی ترقی کیلئے انکے عزم کا اعادہ ہے۔ انھوں نے توقع ظاہر کی کہ یہ اعلامیہ گھروں، اسکولوں، کلینکوں اور معاشروں میں خدمات کے شعبے میں سرمایہ کاری کے لئے عالمی تحریک کو مضبوط کرے گا جو چھوٹے بچوں کو زندگی میں بہترین آغاز فراہم کرتی ہے۔ انکا کہنا تھا کہ یونیسف کے ساتھ تعاون سے انھیں ایک ڈونر سے اسٹریٹجک پارٹنر بننے میں مدد ملی ہے.

 

دبئی کیئرز نے یونیسیف، اقوام متحدہ کے دیگر امدادی اداروں ، بین الاقوامی اور مقامی غیر سرکاری تنظیموں کے ساتھ اشتراک میں افغانستان، بوسنیا ہرزیگوینا، کوومورس جزائر، گیمبیا، بھارت، اردن، کیرباتی، لاوس، ملاوی، میکسیکو، فلسطین، پیرو، روانڈا، واناتو، تنزانیہ اور زنزبیر میں 30,043,275.87 ڈالر کی لاگت سے ابتدائی بچپن میں نشونما کی ترقی کے پروگراموں کا آغاز کیا تھا.

 

ریاض خان .

 

http://wam.ae/en/details/1395302738341

WAM/Ahlam Al Mazrooi