برطانیہ، متحدہ عرب امارات ای گورنمنٹ ماڈل سے سیکھنے کا خواہاں ہے،برطانوی وزیر

حاتم حسین: دبئی،10 فروری، 2019(وام)۔۔برطانیہ کے رکن پارلیمینٹ اور یوکے میں خصوصی تعلیم کی ضروریات کے وزیرناظم زھاوی نے کہا ہے کہ برطانیہ، متحدہ عرب امارات میں برطانوی یونیورسٹیوں کی تعداد میں اضافے کا خواہاں اور عرب امارات ای گورنمنٹ پروگرام کے ماڈل سے سیکھنا چاہتا ہے۔تعلیم ہمارے لئے ایک بڑابرآمدی شعبہ اورامارات کے ساتھ تعلیم کے شعبہ میں ہماری بڑی شراکت داری قائم ہے۔یواے ای میں تیرہ یونیورسٹیاں اور متعدد سکولوں میں انگریزی نصاب رائج ہے جبکہ چالیس فیصد اسکول برطانوی نصاب کی تعلیم دے رہے ہیں۔دبئی میں جاری ساتویں ورلڈ گورنمنٹ سمٹ کے موقع پر امارات نیوزایجنسی وام سے گفتگو کرتے ہوئے زھاوی نے امارات کے امور حکومت میں جدید ٹیکنالوجی کے فروغ کو سراہتے ہوئے کہا کہ ناصرف حکومت بلکہ شعبہ تعلیم میں بھی جدید ٹیکنالوجی میں جدیدیت کو اپنایا جارہا ہے۔ای گورنمنٹ کے پروگرام ماڈل کے حوالے سے ہم امارات سے بہت کچھ سیکھ سکتے ہیں۔اس حوالے سے ہم تجربات کے تبادلہ کے خواہاں ہیں اور مجھے اس غیر معمولی اجلاس میں شرکت پر انتہائی خوشی ہے۔انہوں نے کہا کہ انسانیت کی فلاح وبہبود اور خوشیوں کے ایجنڈا کے ساتھ اس کانفرنس کا انعقاد کرنے پر وہ امارات کے کابینہ امور ومستقبل کے وزیر محمد القرقاوی اوروزیر مملکت برائے خوشی وبہبودعھود بنت خلفان الرومی کا شکریہ ادا کرنا چاہتے ہیں۔معزور افرادخصوصاً کسی بھی معزوری کا شکار بچوں کو خصوصی توجہ دینے پر انہوں نے امارات حکومت کی کوششوں کو سراہا۔اور کہا کہ وہ کانفرنس میں شرکت کے ساتھ اس حوالے سے بھی امارات کے ساتھ تبادلہ خیال کریں گے۔انہوں نے کہا کہ وہ خصوصی افراد کے لئے گھر میں ہی سیکھنے کے ماحول کے ماڈل پر تبادلہ خیال کریں گے.

ترجمہ۔تنویر ملک.

http://wam.ae/en/details/1395302738558

WAM/