• uae, oecd sign 3-year extension on international tax principles cooperation  1
  • uae, oecd sign 3-year extension on international tax principles cooperation  2
  • uae, oecd sign 3-year extension on international tax principles cooperation  3

متحدہ عرب امارات اور  OECDکی دہرے ٹیکسوں سے بچنے کے معاہدے میں تین سالہ توسیع

دبئی، 11 مارچ، 2019 (وام) ۔۔ وزارت خزانہ نے دوہرے ٹیکسوں سے بچنے اور دو طرفہ سرمایہ کاری کے معاہدوں کے 30 سال مکمل ہونے کا جشن منانے کے لئے ایک سرکاری تقریب کا انعقاد کیا۔ اس موقع پر پریس کانفرنس میں متحدہ عرب امارات اور اقتصادی تعاون اور ترقی کی تنظیم کے درمیان معاہدے میں تین سالہ توسیع کا اعلان کیا گیا.

دبئی کے نائب حکمران اور وزیر خزانہ شیخ حمدان بن راشد آل مکتوم نے ان معاہدوں کی اسٹریٹجک اہمیت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ متحدہ عرب امارات کی قیادت اس معاہدے کی اہمیت کو سمجھتی ہے کیونکہ اس سے بیرون ملک مقامی سرمایہ کاری پر ٹیکسوں کا بوجھ کم کرنے اور غیر تجارتی خطرات سے بچانے میں مدد ملے گی۔ انکا کہنا تھا کہ اس سے متحدہ عرب امارات میں مسابقت کی فضا بڑھے گی اور دنیا بھر سے سرمایہ کاری کی حوصلہ افزائی ہوگی .

انھوں نے کہا کہ دہرے ٹیکسوں کو روکنے اور سرمایہ کاری کی حفاظت اور اسے فروغ دینے کے معاہدے غیر ملکی سرمایہ کاری کو بڑھانے اور قوم کی مسابقت کو بہتر بنانے کے عمل میں ایک اہم عنصر ہیں۔ یہ معاہدے ملک کے ترقیاتی اہداف کے حصول اور قومی آمدنی کے ذرائع کو فروغ دینے میں مددگار ثابت ہوتے ہیں.

خزانے کے وزیر مملکت عبید بن حمید نے اپنی وزارت کی طرف سے دوہرے ٹیکسوں سے بچنے کیلئے معاہدوں پر دستخط کرنے کے سلسلے میں متحدہ عرب امارات کے تعلقات کے بین الاقوامی نیٹ ورک کو بڑھانے کے عزم کا اعادہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ یہ معاہدے ملک کے تجارتی اور اقتصادی تعلقات کو فروغ دینے، کمپنیوں کے لئے زیادہ سرمایہ کاری کے مواقع فراہم کرنے کے ساتھ غیر ملکی سرمایہ کاری بڑھانے اور سرحد پار تجارت کو فروغ دینے میں مددگار ثابت ہوتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وزارت خزانہ نے اس سمت میں اہم اقدامات کیے ہیں اور اب تک 210 ٹیکس معاہدوں پر دستخط ہو چکے ہیں.

انھوں نے کہا کہ متحدہ عرب امارات نے خطے اور دنیا بھرمیں دوہرے ٹیکسوں کے مسائل سے متعلق آگاہی کو فروغ دینے میں بھی ایک اہم کردار ادا کیا ہے۔ انکا کہنا تھا کہ اقتصادی تعاون اور ترقی کی تنظیم کا ایک اسٹریٹجک پارٹنر ہونے کے ناطے متحدہ عرب امارات نے ٹیکس معاہدوں کے معاملات پر علاقائی ورکشاپس منعقد کراکر خطے کی حکومتوں میں آگاہی پیدا کی.

معاشی توازن حاصل کرنے اور غیر تجارتی خطرات سے سرمایہ کاری کو بچانے کی خاطر دوست ملکوں کے ساتھ دوہرے ٹیکسوں سے بچنے اور سرمایہ کاری کے تحفظ اور فروغ کیلئے پہلی مرتبہ مذاکرات 1989 میں ہوئے.

1989 سے 2018 کے درمیان متحدہ عرب امارات نے مجموعی طور پر 210 معاہدوں پر دستخط کیے ہیں جن میں دوہرے ٹیکسوں سےبچاو کے 123 معاہدے جبکہ سرمایہ کاری کی حفاظت اور فروغ کے 87 معاہدے شامل ہیں۔ متحدہ عرب امارات دوہرے ٹیکسوں سے بچنے کے معاہدوںمیں دنیا میں دوسرے جبکہ عرب ممالک میں پہلے نمبر پر ہے.

ریاض خان .

http://wam.ae/en/details/1395302746412

WAM/