سائبرجرائم اور داعش میں شمولیت پر قمرون کے شہری کو پانچ سال قید کی سزا


ابوظبی، 14 مئی، 2019 (وام) ۔۔ متحدہ عرب امارات کے وفاقی سپریم کورٹ کے اسٹیٹ سیکیورٹی چیمبر نے اتوار کو قمرون کے ایک 21 سالہ شہری (A.A.A.Z) کو پانچ سال قید اور 1،000،000 درہم جرمانے کی سزا سنائی ہے.

عدالت نے جرائم کے ارتکاب کے دوران استعمال کئے گئے تمام آلات ضبط کرنے، مجرم کی طرف سے تیار شدہ تمام ڈیٹا ضائع کرنے اور اس کے تمام اکاؤنٹس بند کرنے کا حکم دیا ہے۔ مجرم کو تمام عدالتی اخراجات ادا کرنے کا بھی حکم دیا گیا ہے.

A.A.A.Z نے اپنے ٹویٹر اکاؤنٹ کے ذریعے دہشتگر تنظیم داعش میں شمولیت اور تنظیم کے رہنما ابوبکر البغدادی کی بیعت کرنے کا اعلان کیا تھا.

عدالت نے A.A.A.Z کو اپنے ٹویٹر اکا ونٹ کے ذریعے القاعدہ اور داعش کو فروغ دینے والے نقصان دہ معلومات اور مضامین پھیلانے اور نوجوانوں کو ان دہشتگرد گروہوں میں شامل ہونے کی ترغیب پر بھی سزا دی ہے۔ ملزم کو متحدہ عرب امارات اور اس کی کمیونٹی سے متعلق غلط معلومات اور میڈیا مضامین شائع کرنے پر بھی سزا دی گئی ہے.

عدالت نے کہا ہے کہ مجرم نے انسداد دہشتگردی کے 2014 کے وفاقی قانون نمبر 07 کے آرٹیکلز 1, 22اور 45 اور سائبر جرائم کے حوالے سے وفاقی قانون نمبر 05 کی شقوں 1, 9, 26, 41 کی خلاف وزری کے جرائم میں ملوث پایا گیا.

ترجمہ: ریاض خان .

http://wam.ae/en/details/1395302762553

WAM/Urdu