دہلی میٹرو فضلے سے پیدا توانائی حاصل کرنے والا بھارت کا پہلا میٹرو منصوبہ بن گیا


نئی دہلی، 5جون، 2019 (وام) ۔۔ بھارت کے دارالحکومت کی میٹروریل نے ماحول دوست نیٹ ورک کے قیام کی کوششوں میں سنگ میل عبورکرلیا ہے۔ ایشین نیوز انٹرنیشنل،اے این آئی، کی رپوٹ کے مطابق دہلی میٹرو فضلے سے توانائی پیدوار کے پلانٹ سے توانائی حاصل کرنے والا بھارت کا پہلا میٹرو منصوبہ بن گیا ہے.

 

میٹرو کے آپریٹر دہلی میٹرو ریل کارپوریشن، ڈی ایم آر سی، کا کہنا ہے کہ اس نے مشرقی دہلی کے علاقے غازی پور میں قائم بارہ میگاواٹ صلاحیت کے فضلے سے توانائی پیداوار کے پلانٹ سے دومیگاواٹ بجلی حاصل کرنا شروع کردی ہے.

 

ڈی ایم آر سی کے منگل کو جاری پریس بیان کے مطابق ڈی ایم آر سی اس پلانٹ سے سالانہ تقریباً ایک کروڑ پچھہتر لاکھ یونٹس حاصل کرے گا۔ڈی ایم آر سی کا کہنا ہے کہ "اپنی نوعیت کا یہ جدید ترین پلانٹ یومیہ ایک ہزار پانچ سو ٹن فضلے کو پراسس کرکے بارہ میگاواٹ بجلی پیدا کرسکتا ہے۔پلانٹ اپنے منصوبے کی پوری لائف کے دوران اسی لاکھ ٹن گرین ہاوس گیسز میں کمی کا باعث بنے گا جس سے عالمی حدت کو کم کیا جاسکے گا.

 

دہلی میٹرو کو دنیا بھر میں کاربن کریڈٹ کا دعوی کرنے والی پہلی ریل بیسڈ تنظیم ہونے کا اعزاز حاصل ہے۔ڈی ایم آر سی نے دہلی کے علاقے روہنی میں ایک سوپچاس ٹن یومیہ صلاحیت کا کنسٹرکشن اینڈ ڈیمولیشن (سی اینڈ ڈی) ویسٹ کا ری سائکلنگ منصوبہ بھی شروع کیا ہے۔ڈی ایم آر سی اپنے سٹیشنوں،ڈپو ووں اور رہائشی علاقوں کی چھتوں پر نصب سولر پاور پلانٹس سے اٹھائیس میگاواٹ شمسی توانائی بھی پیدا کررہا ہے۔ترجمہ۔تنویر ملک.

 

http://wam.ae/en/details/1395302766534

WAM/Urdu