پہلی سہہ ماہی میں دبئی کی 339 ارب درہم کی غیرتیل تجارت

دبئی ، 11 جون ، 2019 (وام) ۔۔ دبئی نے سال 2019ء کی پہلی سہہ ماہی میں 339 ارب درہم کی غیرتیل والی غیرملکی تجارت کی جو کہ گزشتہ سال کی اسی عرصہ میں 316 ارب درہم کی تجارت سے سات فیصد زائد ہے ۔ یہ بات دبئی کسٹمز کی طرف سے جاری تفصیلات میں بتائی گئی – رواں سال کی اس پہلی سہہ ماہی میں ملکی برآمدات میں سب سے زیادہ 30 فیصد اضافہ ہوا جس کا حجم 42 ارب درہم رہا ، دوبارہ برآمد ہونے والی اشیاء میں 7 فیصد اضافہ ہوا جسکا حجم 106 ارب درہم رہا اور درآمدات 4 فیصد اضافے کے ساتھ 190 ارب درہم کی رہیں – دبئی کسٹمز کے اعداد و شمار کے مطابق غیر تیل والی تجارت کا حجم 32 فیصد بڑھ کر 28 ملین ٹن رہا جو کہ گزشتہ سال کے اسی عرصہ میں 21 ملین ٹن تھا ۔ برآمدی حجم میں 94 فیصد اضافہ ہوا جسکا وزن 6 ملین ٹن تھا جبکہ دوبارہ برآمد ہونے والی اشیاء کا وزن 4 ملین ٹن رہا اور اسکا حجم 41 فیصد بڑھا ۔ درآمدات کا حجم 16 فیصد بڑھ کر 17 ملین ٹن رہا – دبئی کے ولی عہد اور دبئی اگزیکٹو کونسل کے چیئرمین عزت مآب شیخ حمدان بن محمد بن راشد المکتوم کا غیرتیل تجارت کے حوالے سے کہنا ہے کہ یہ حوصلہ افزاء اعداد و شمار اس بات کو ثبوت ہیں کہ ہم درست سمت کی جانب تیزی سے گامزن ہیں ، یہ ملکی ریونیو میں تنوع کا مظہر ہونے کے ساتھ آئیندہ پچاس سالوں کے منصوبہ والے چارٹر کے عین مطابق بھی ہے – دبئی شاہراہ ریشم کی حکمت عملی میں دہائیوں سے جاری ترقی کا عنصر شامل ہے جو کہ نائب صدر ، وزیراعظم اور دبئی کے حکمران عزت مآب شیخ محمد بن راشد المکتوم کے نظریہ اور ہدایات کے عین مطابق ہے – سال 2010ٰ اور 2019 کے درمیان دبئی کی غیر تیل تجارت میں 58 فیصد کا اضافہ ہوا ہے ، 2010ء کی پہلی سہہ ماہی میں یہ 215 ارب درہم تھی جو کہ اب 124 ارب درہم بڑھ چکی ہے ۔ فری زونز سے ہونے والی تجارت 147 ارب درہم ہوچکی ہے جس میں سالانہ 20 فیصد یا اس سے زائد اضافہ ہوتا رہا ہے ۔ تجارت کے ان اعداد و شمار کے مطابق دبئی کی اس تجارت کا سب سے بڑا خطہ ایشیاء رہا جہاں یہ تجارت 7 فیصد بڑھ کر کل 208 ارب درہم کی رہیں ۔ یورپ دوسرا بڑا تجارتی پارٹنر رہا جہاں تجارتی حجم 58 ارب درہم رہا جبکہ افریقہ کے ساتھ سب سے زیادہ 36 فیصد تجارتی اضافہ ہوا اور اسکا مالیت 42 ارب درہم رہی ۔ امریکہ اور اوشیانا خطے سے بھی تجارت سات اور نو فیصد بڑھی – ڈی پی ورلڈ گروپ چیئرمین اور پورٹس و کسٹمز کے سی ای او اور چیئرمین سلطان بن سلیم کا کہنا ہے کہ غیر تیل شعبے کی تجارت میں 7ء7 فیصد کا اضافہ ہونا اور اسکا حجم 339 ارب درہم ہوجانا ایک بڑی پیشرفت ہے ، بعض چیلنجز کے باوجود یہ تجارتی صورتحال دبئی کی مضبوط معیشت کا بھرپور عکاس بھی ہے – دبئی کے تین بڑے تجارتی پارٹنر ممالک میں پہلے نمبر پر چین ، پھر بھارت اور اس کے بعد امریکا ہیں ، چین سے تجارت 8 فیصد بڑھ کر 36 ارب درہم رہیں ، بھارت سے تجارت میں 40 فیصد سے زائد کا اضافہ ہوا اور اسکی مالیت 33 ارب درہم رہیں جبکہ امریکا سے تجارت میں 10 فیصد سے زائد اضافہ پاکر 20 ارب درہم رہی ۔ عرب خطے میں سب سے بڑا تجارتی شراکت سعودی عرب رہا جس کے ساتھ تجارتی حجم 13 ارب 20 کروڑ درہم رہا – اسی پہلی سہہ ماہی میں دبئی سے سونے اور جواہرات کی کل تجارت کا حجم 90 ارب درہم رہا ۔ دوسرے نمبر پر فون کی مارکیٹ رہی جسکا حجم 42 ارب درہم تھا – ترجمہ ۔ تنویر ملک – http://wam.ae/en/details/1395302767236

WAM/Urdu