متحدہ عرب امارات اور بھارت دوطرفہ ائر سروس معاہدہ پر نظرثانی کے لئے مزاکرات کریں گے


کرشنن نیر سے نئی دہلی، 15 جون، 2019 ( وام) ۔۔ بھارت میں متحدہ عرب امارات کے سفیر، ڈاکٹر احمد عبدالرحمان البنا نے بھارت کے نئے وزیر برائے شہری ہوابازی، ہردیپ سنگھ پوری سے ملاقات کی اور شہری ہوابازی سے متعلق دونوں ممالک کے درمیان تعاون سے متعلقہ امور پر بات چیت کی۔تیس مئی کو بھارت کی نئی حکومت کے حلف اٹھانے کے بعد عرب امارات کی جانب سے وزیر اعظم نریندرا مودی کی کابینہ کے کسی رکن سے یہ پہلی ملاقات تھی۔

سفیر نے بھارتی وزیر کو باہمی فضائی سروس کے معاہدہ کی حیثیت سے آگاہ کرتے ہوئے یواے ای سول ایوی ایشن اتھارٹی کی جانب سے موجودہ معاہدہ پر نظر ثانی کے لئے جلد مزاکرات کی ضرورت پرزور دیا کیونکہ موجودہ معاہدہ کے تحت گنجائش مکمل ہوگئی ہے۔

ڈاکٹر البنا نے امارات خبر ایجنسی وام کو بتایا کہ پوری نے آج ہونے والی بات چیت میں عرب امارات کی جانب سے اٹھائے گئے اس معاملے پر مثبت جواب دیا ہے۔وزیر کا کہنا تھا کہ عرب امارات اور بھارت کے سٹریٹیجک تعلقات ہیں۔دوطرفہ ائر سروس معاہدہ پر مزاکرات دو یا تین ماہ میں شروع ہونے کی توقع ہے۔

ڈاکٹ البنا نے پوری کو بتایا کہ عرب امارات اوپن سکائی پالسی پر عمل پیرا ہے اور اس نے انڈین فضائی کمپنیوں کو امارات میں اپنے آپریشنز میں توسیع دینے سے کبھی انکار نہیں کیا۔انہوں نے کہا کہ سول ایوی ایشن کی مارکیٹ کی موجودہ صورتحال گنجائش میں اضافے کی متقاضی ہے۔اس وقت عرب امارات اور بھارت کے درمیان ہفتہ وار دو طرفہ ایک ہزار اڑسٹھ پروازوں کی اجازت ہے۔ جن میں سے عرب امارات کی ائزلائنز کی چار سو جبکہ انڈین کمپنیوں کی پروازوں کی تعداد پانچ سو سے زائد ہے۔

ڈاکٹر البنا نے کہا کی یو اے ای کی فضائی کمپنیاں مزید بھارتی شہروں تک اپنے آپریشنز کو توسیع دینا چاہتی ہیں۔عرب امارات اور بھارت کے درمیان مزید کارگو پروازوں کا سکوپ بھی موجود ہے۔

رواں ہفتے کے شروع میں پوری نے کہا تھا کہ حال ہی میں بند ہونے والی بھارت کی بڑی نجی کمپنی جیٹ ائر ویز کے فارن ٹریفک کے حقوق خلیج اور دیگر بین الاقوامی فضائی کمپنیوں کو دے دیے جائیں گے۔

ترجمہ۔تنویر ملک

 

http://wam.ae/en/details/1395302767856

WAM/Urdu