متحدہ عرب امارات منظم جرائم اور عالمی دہشتگردی میں رابطوں  کےخاتمے کیلئے پرعزم ہے


نیویارک، 10 جولائی، 2019 (وام) ۔۔ متحدہ عرب امارات نے منظم جرائم اور بین الاقوامی دہشتگردی کے درمیان رابطوں کے خلاف بھرپور کردار ادا کرنے کے عزم کا اعادہ کرتے ہوئے عالمی امن اور سلامتی کو برقرار رکھنے کیلئے منی لانڈرنگ کے خاتمے اور سرحدی سیکورٹی مضبوط بنانے کا بھی عزم کیا ہے.

 

اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں بین الاقوامی امن اور سلامتی کو درپیش خطرات: بین الاقوامی دہشتگردی اور منظم جرم کے درمیان رابطوں کے حوالے سے مباحثے میں متحدہ عرب امارات کے مستقل نمائندے سعود الشمسی نے کہا کہ اقوام متحدہ اس حوالے سے رکن ملکوں کی استعداد کار کو مضبوط بنانے پر توجہ دے۔ اس کے علاوہ اقوام متحدہ ان رکن ملکوں کا احتساب کرے بھی کرے جو دہشتگرد گروہوں کو حمایت اور مالی معاونت فراہم کرتے ہیں۔ انہوں نے بین الاقوامی دہشتگردی اور منظم جرائم کے درمیان رابطے کو بہتر طور پر سمجھنے کی ضرورت پر زور دیا اور کہا کہ اس طرح کے جرائم سے مؤثر طریقے سے نمٹنے کیلئے خصوصی پروگرام تیار کرنے کی ضرورت ہے.

 

انھوں نے کہا کہ مشرق وسطی کے اہم تجارتی اور مالیاتی مرکز کے طور پر متحدہ عرب امارات بین الاقوامی دہشتگردی اور منظم جرائم کا مقابلہ کرنے کیلئے بھرپور کردار ادا کررہا ہے.

 

الشمسی نے کہا کہ دہشتگردی اور منظم جرائم کے درمیان روابط میں اضافہ ہورہا ہے ۔ دہشتگرد انسانی سمگلمنگ، ہتھیاروں، ثقافتی اثاثوں، قدرتی وسائل اور مالیاتی وسائل کی سمگلنگ کے ذریعے اپنی کاروائیوں کیلئے پیسہ اکھٹا کرتے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ بین الاقوامی دہشتگردی کے خاتمے کیلئے منظم جرائم سمیت ہر قسم کی مالیاتی اور لاجسٹک معاونت کو ختم کرنا ہوگا.

 

سعود الشمسی نے کہا کہ قومی سطح پر متحدہ عرب امارات نے دہشتگردی کی مالی امداد روکنے اور اس سلسلے میں فنانشل ایکشن ٹاسک فورس، FATF کی تازہ ترین سفارشات پر عملدرآمد کے لئے اپنے قانونی فریم ورک کو مضبوط کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ متحدہ عرب امارات کے مالیاتی انٹیلی جنس یونٹس کو مشکوک لین دین کا تجزیہ اور تحقیق کرنے کے لئے تمام مطلوبہ صلاحیتوں سے لیس کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بین الاقوامی دہشتگردی اور منظم جرم کے درمیان رابطوں کو نجی شعبے اور غیر منافع بخش اور خیراتی اداروں کے ساتھ قریبی تعاون کے بغیر مؤثر طور پر ختم نہیں کیا جاسکتا.

 

انھوں نے کہا کہ دہشتگردی کے لئے مالی تعاون کے انسداد سے متعلق علاقائی اور بین الاقوامی معاہدوں اور کنونشنز کا حصہ ہونے کے ساتھ ساتھ متحدہ عرب امارات نے اس مسئلے پر اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قراردادوں پر عملدرآمد کو بھی یقینی بنایا ہے۔ انھوں نے کہا کہ متحدہ عرب امارات اس سلسلے میں کردار ادا کرتا رہے گا.

 

ترجمہ: ریاض خان .

 

http://wam.ae/en/details/1395302773394

WAM/Urdu