رواداری سال کے پہلے نصف میں 40لاکھ سے زائد افراد نے شیخ زاید جامع مسجد کا دورہ کیا


ابوظبی، 14 جولائی، 2019 (وام) ۔۔ روادری کے سال کے پہلے چھ ماہ کےدوران اسلامی فن تعمیر کے شاہکار اور امن، رواداری اور تنوع کے پیغام شیخ زاید جامع مسجد ابوظبی کا 249 قومیتوں کے 4, 480,000 افراد نے دورہ کیا.

 

شیخ زاید جامع مسجد مرکز ، SZGMC کی طرف سے جاری کئے گئے اعداد و شمار کے مطابق ان افراد میں سے 967,150 عبادت گزار تھے.

 

رپورٹ کے مطابق ایشیا کے سیاحوں کی تعداد سب سے زیادہ دس لاکھ سے زائد ہے۔ اسکے بعد یورپ 623,000 سے زائد سیاحوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ، شمالی امریکہ سے 95,000سیاحوں، افریقہ سے 53,000، جنوبی امریکہ سے 49,000، آسٹریلیا سے 25,000جبکہ انٹارکٹیکا سے 2,178سیاحوں نے اس مسجد کو دیکھا.

 

اگر قومیتوں کے حوالے سے دیکھا جائے تو اس مسجد کو دیکھنے والوں میں بھارت کے باشندوں کی تعداد 392,246کے ساتھ سرفہرست رہی۔ اسی طرح چینی باشندوں کی تعداد 335,530، روس کے باشندوں کی تعداد 116,467، جرمنی 102,285، فرانس 74,606، برطانیہ 63,676، امریکہ60,209، پاکستان 57,185، اٹلی 44,787اور 43فلپائن کےباشندوں کی تعداد 43,229ریکارڈ کی گئی.

 

اعداد و شمار کے مطابق مارچ میں سب سے زیادہ 511,227 سیاحوں نے جامع مسجد کا دورہ کیا.

 

اعداد و شمار میں بتایا گیا ہے کہ جنوری سے جون تک مسجد آنے والوں میں سے 82 فیصد سیاح اور 18 فیصد رہائشی تھے.

 

مسجد میں آنے والوں کی اکثریت خواتین کی ہے اور انکی تعداد مجموعی طور پر 53 فیصد ریکارڈ کی گئی.

 

اسی طرح زیادہ تر سیاحوں کی عمر 46 سال اور اس سے زیادہ رہی جو مجموعی سیاحوں کا 31 فیصد ہے.

 

رمضان المبارک کے مہینے میں 890,000سے زائد مسلمانوں نے مسجد کے ایئرکنڈیشن خیموں میں روزہ افطار کیا.

 

سال کے پہلے چھ ماہ کے دوران SZGMC نے 1,726مفت ثقافتی ٹورز کرائے ۔ اسی طرح جامع مسجد کے بارے میں گیارہ زبانوں میں معلومات فراہم کرنے والے ای گائیڈ کو 17,329 سیاحوں نے دیکھا.

 

مسجد کی غیرمعمولی اسلامی فن تعمیرنے بہت سے اہم مقامی اور بین الاقوامی ذرائع ابلاغ کو بھی اپنی طرف متوجہ کیا ہے۔ اس حوالے سے SZGMC کو متحدہ عرب امارات، امریکہ کے (سی این این اور اے بی سی ٹی وی چینلز)، چینل 7 آسٹریلیا، بیلجیم ٹی وی، آرمینیا ٹی وی، مصر ٹی وی اور ڈیلی یوم 7 اور برطانیہ کی آکسفورڈ یونیورسٹی سمیت 76 سے زائد میڈیا اداروں سے کوریج کی درخواستیں موصول ہوئیں.

 

ترجمہ: ریاض خان .

 

http://wam.ae/en/details/1395302773908

WAM/Urdu