یمن میں ہیضے کی وبا روکنے کے لئے عرب امارات کی کوششیں جاری


عدن، 9 اگست ، 2019 (وام) ۔۔ متحدہ عرب امارات نے یمن میں ہیضے کے پھیلاوکو روکنے کے لئے اپنی کوششیں جاری رکھی ہوئی ہیں.

 

امارات ہلال احمر، ای آر سی، نے اسپتالوں ، مراکزصحت اور کلینکس کو ادویات اور طبی سامان کی فراہمی کے ساتھ ساتھ صحت سے متعلق آگاہی مہمات بھی چلائی ہیں.

 

یمن کے بحیرہ احمر کے ساحلی علاقے کے علاوہ تعز اور الحدیدة گورنریٹس میں بھی امداد ی کوششیں کی گئی ہیں۔ متحدہ عرب امارات کے امدادی ادارے نے یمنی شہریوں میں پینے کا پانی بھی تقسیم کیا.

 

یمن کی صحت عامہ اور آبادی کی وزارت نے پندرہ سے اکیس جولائی دوہزار انیس کے درمیان ہیضے کے انیس ہزار چار سو انسٹھ مشتبہ کیسز اور گیارہ اموات رپورٹ کی ہیں.

 

عرب امارات کے امدادی ادارے کے نمائندے نے بتایا کہ حفظان صحت کے مختلف مراکز میں ادویات ، درون وریدی فلوئڈز، اینٹی بائیوٹکس اور دیگر ضروری طبی سامان تقسیم کیا گیا.

 

الوزیة ڈائریکٹوریٹ کے دفتر برائے صحت وآبادی کے ڈائریکٹر ڈاکٹر رباش احمد صالح نے کہا کہ ای آر سی نے حفظان صحت کے اداروں کو ادویات اور طبی سامان فراہم کرکے زندگیاں بچانے میں معاونت کی ہے.

 

انہوں نے واضح کرتے ہوئے مزید کہا کہ سولہ روزکے دوران ، عرب امارات کے امدادی ادارے نے ہیضے کے پھیلاو کو روکنے کے لئے علاج ، آگاہی اور روک تھام کے تین اقدامات پر مشتمل مرحلے پر عمل کیا.

 

ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن ، ڈبلیو ایچ او کے مطابق ، یکم جنوری دوہزار اٹھارہ سے اکیس جولائی دوہزار انیس تک ہیضے کے مشتبہ واقعات کی مجموعی تعدادآٹھ لاکھ پچاسی ہزار نو سوبیاسی رہی جن میں سے ایک ہزار دوسو انسٹھ کی اموات ہوئی.

 

اقوام متحدہ کے عالمی ادارہ برائے صحت کے مطابق یمن کے تئیس گورنریٹس میں سے بائیس او رتین سو تینتیس اضلاع میں سے تین سو ایک ہیضے کی وبا سے متاثر ہوئے ہیں.

 

ترجمہ۔ تنویر ملک.

 

http://wam.ae/en/details/1395302779631

WAM/Urdu