گنی بساؤ عرب امارات کے لئے لاطینی امریکہ کا گیٹ وے بننے کا خواہاں ہے: وزیر اعظم

  • _w0i7741.jpg
  • _w0i7729.jpg

بنسال عبدالقادر سے ابوطہبی ، 10 اگست ، 2019 (وام) ۔۔ ماحولیاتی سیاحت اور انفراسٹرکچر کی ترقی کیلئے گنی بساؤ کے پرعزم منصوبوں نے متحدہ عرب امارات کیلئے مغربی افریقہ کے اس چھوٹے ملک کو لاطینی امریکہ جانے والوں کی خاطر گیٹ وے بنادیا ہے ۔ اس بات کا اظہار گنی بساؤ کے وزیراعظم ارسٹائڈس گومز نے امارات نیوز ایجنسی وام کو یہاں خصوصی انٹرویو میں کیا – انہوں نے کہاکہ انکا ملک ، بحیرہ اوقیانوس کی ساحل پر مغربی افریقہ کے کنارے پر واقع ہے ، بساؤ سے براہ راست پرواز نہ ہو تو بھی یہاں سے برازیل صرف پانچ گھنٹے کی فضائی مسافت پر واقع ہے ۔ متحدہ عرب امارات اور لاطینی امریکہ کے درمیان فروغ پاتے تعلقات کے تناظر میں گنی بساؤ کو ان دونوں کے درمیان ایک گیٹ وے کی اہمیت حاصل ہوگئی ہے – ابوظہبی کے سرکاری دورے پر آئے ہوئے گنی بساؤ کے وزیراعظم نے کہاکہ گنی بساؤ میں سیاحت کا انفراسٹرکچر تعمیر کئے جانے سے خلجی ممالک اور لاطینی امریکہ کے درمیان سفر کرنے والوں کو بہت سہولت ملے گی ، 88 جزائر پر مشتمل اس ملک میں ایکو ٹورازم کو فروغ دینے کا بیش بہا مواقع موجود ہیں اور اس حوالے سے اقوام متحدہ کے مختلف اداروں کے مطابق گنی بساو دنیا کے غریب ترین ممالک میں سے ایک ہے جہاں ستر فیصد لوگ غربت کا شکار ہیں.

 

چھتیس ہزارمربع کلومیٹر سے زیادہ رقبے پر یہ مغربی افریقی ممالک کاسب سے چھو ٹا ملک ہے ، جس کی مجموعی آبادی اٹھارہ لاکھ ساٹھ ہزار سے زیادہ ہے۔ پرتگال کی سابقہ کالونی رہنے والے اس ملک کی سرحدیں شمال میں سینیگال اور جنوب مشرق میں گنی سے ملتی ہیں ، اس کے مغرب میں بحر اوقیانوس ہے.

 

عرب امارات کے دورے کے دوران ، وزیر اعظم نے وزیر برائے امور خارجہ وبین الاقوامی تعاون عزت مآب شیخ عبداللہ بن زاید آل نھیان سے ملاقات کی ، اور دوطرفہ تعلقات اور مجموعی تعاون کو بڑھانے کے طریقوں پر تبادلہ خیال کیا.

 

شیخ عبد اللہ نے گنی بساوکے ساتھ عرب امارات کے دوطرفہ تعلقات کو بڑھانے کے لئے اپنی خواہش کا اظہار کیا.

 

وزیر اعظم نے کہا کہ "یہ ایک غیر معمولی ملاقات تھی ، جس میں قابل تجدید توانائی اور پائیدار ترقی کی حکمت عملی میں تعاون پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ گومز نے کہا کہ " ہم متحدہ عرب امارات کی جانب سے تیل کی آمدنی کو موثر طریقے سے استعمال کرنے اور پائیدار ترقی کا راستہ اپنانے سے متاثر ہیں۔"

وزیر اعظم اور ان کے وفد نے ابو ظہبی فنڈ برائے ترقی ، اے ڈی ایف ڈی کے ڈائریکٹر جنرل محمد سیف السویدی سے بھی ملاقات کی اور ترقیاتی کاموں اور مالی اعانت میں تعاون پر تبادلہ خیال کیا.

 

غریب عوام کی معیشت کو بہتر بنانے کے لئے اپنے عزائم کے حوالے سے وزیر اعظم نے کہا کہ انہوں نے بحر الجزائربیجاگوس میں ایکو ٹورازم ،ملک کے ہوابازی اور قابل تجدید توانائی منصوبوں میں عرب امارات کی شراکت طلب کی ہے۔ گومز نے کہا کہ "ہمیں سب کچھ شروع سے بنانا ہے۔"

ملک کی اپنی کوئی ایئر لائن نہیں ۔دارالحکومت کے واحد بین الاقوامی ہوائی اڈے پر افریقہ کے باقی ممالک اور پرتگال سے پروازیں آتی ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ مزید پروازوں کے لئے ہوائی اڈے کے انفراسٹرکچر کو مزید ترقی دینا ہوگی.

 

گنی بساؤ میں ابھی تک قابل تجدید توانائی کا کوئی منصوبہ نہیں زیادہ تر بجلی ایندھن کے ذریعہ تیار کی جاتی ہے۔ وزیر اعظم نے کہا کہ "ہم ابھی شروعات کر رہے ہیں۔ ہمیں (قابل تجدید توانائی میں)قدم بہ قدم جانا ہے.

 

ترجمہ۔ تنویر ملک.

 

http://wam.ae/en/details/1395302779721

WAM/Urdu