عبداللہ بن زاید نے ابوظہبی برآمدات آفس کا افتتاح کردیا


ابوظہبی ، 9 ستمبر ، 2019 (وام) ۔۔ نائب وزیراعظم ، وزیر برائے صدارتی امور اور ابوظہبی فنڈ برائے ترقی کے چیئرمین بورڈ عزت مآب شیخ منصور بن زاید النھیان کی سرپرستی میں وزیرخارجہ عزت مآب شیخ عبداللہ بن زاید النھیان ن آج ابوظہبی ایکسپورٹ آفس کا افتتاح کردیا .

 

اے ڈی ایف ڈی کی طرف سے تیار کردہ اے ڈی ای ایکس (ایڈکس) کا مقصد قومی معیشت میں تعاون فراہم کرنے کے ساتھ درآمدات اور برآمدات میں سرکاری اور نجی شعبے کو مالیات اور گارنٹیز میں مسابقت کی فضا پیدا کرنا ۔ اس کے دیگر مقاصد میں غیرتیل والی قومی برآمدات کو فروغ دلانا اور نئی عالمی منڈیوں تک سہولت حاصل کرنا شامل ہے ۔ امارات محل ، ابوظہبی میں ہونے والی افتتاحی تقریب میں کئی سینئر عہدیدار، کاروباری اور سرمایہ کاری شعبوں می شخصیات موجود تھیں .

 

شیخ منصور بن زاید کا کہناہےکہ ایڈکس کا اجراء اقتصادی کثیرالجہتی کیلئے متحدہ عرب امارات اور ابوظہبی کے ویژن کا عکاس ہے ۔ ایڈکس کے فرائض میں قومی کمپنیوں کو برآمدات کیلئے عالمی منڈیوں تک رسائی میں معاونت فراہم کرنا اور دنیا بھر میں عرب امارات کی مصنوعات کی دستیابی کو فروغ دینا شامل ہے ۔ یہ اقدام ملکی معیشت کیلئے سنگ میل ثابت ہوگا ۔ شیخ منصور نے عالمی معاشتی اعشاریوں میں عرب امارات کی ٹاپ رینکنگ کا حوالہ دیتے ہوئے کہاکہ اس مثالی عالمی درجہ میں ملکی برآمدات کو مزید فروغ دلانا اہمیت کا حامل ہے – شیخ عبداللہ بن زاید نے کہاکہ ایڈکس کا قیام ملک کے کثیرالجہتی اقتصادی ویژن میں اہم ہونے کے ساتھ ملکی معیشت کو فروغ دلانے کیلئے اہم ہوگا اور اس میں تیل پر انحصار کم کرتے ہوئے آمدن کے نئے ذرائع کا حصول کیا جائے گا ۔ انہوں نے قومی برآمدات کو بڑھانے پر زور دیتے ہوئے کہاکہ یہ قومی قیادت کی ہدایات کے بھی عین مطابق ہے تاکہ ملک کو پائیدار ترقی کی راہ پر گامزن رکھا جاسکے ، اس میں ذہانت م دانش ، تخلیق اور تکنیک کو اہمیت دی جانی چاہیئے – ایڈکس کے ڈی جی محمد سیف السویدی نے بھی اس موقع پر خطاب کیا اور اپنے ادارے کے مقاصد ، ذمہ داریوں اور فرائض پر روشنی ڈالی ۔ انہوں نے کہاکہ عرب امارات کے ویژن 2021 ، ابوظہبی کے اقتصادی ویژن 2030 اور عرب امارات کے سینٹینئل 2071 کے حصول میں ایڈکس کو ایک اہم کردار ادا کرنے کے قابل بنایا جائے گا ۔ ملکی ترقی کو طویل مدتی اور پائیدار بنانے کی خاطر ملکی برآمدات کو فروغ دلانا اہم ہے اور اس کے ساتھ ساتھ ملک میں سرمایہ کاری کا فروغ اور نجی کاروباری کمپنیوں میں اضافہ بھی اہمیت کا حامل ہے – ایڈکس کے قیام میں اے ڈی ایف ڈی نے تین سال کا طویل عرصہ صرف کیا جس میں فزیبلٹی سٹڈی ، آپریشنل فریم ورک کی تیاری اور کوریا کے ایکزم بنک سے تعاون شامل رہا ۔ متحدہ عرب امارات کو عالمی تجارت میں نمایاں مقام حاصل ہے اور وہ 2007ء سے 20 بڑے برآمد کنندہ ممالک میں شامل ہے جبکہ 2013ء سے وہ اس تناظر میں نمایاں ترین عرب ملک ہے .

 

ترجمہ۔ تنویرملک – http://wam.ae/en/details/1395302785159

WAM/Urdu