دبئی کے ولی عہد کا اماراتی خلاباز کو ٹیلیفون، کامیابی اور نیک خواہشات کا اظہار

  • حمدان بن محمد يطمئن هاتفيا على تمام استعدادات رائدي الفضاء الإماراتيين المنصوري والنيادي
  • حمدان بن محمد يطمئن هاتفيا على تمام استعدادات رائدي الفضاء الإماراتيين المنصوري والنيادي
  • حمدان بن محمد يطمئن هاتفيا على تمام استعدادات رائدي الفضاء الإماراتيين المنصوري والنيادي
  • حمدان بن محمد يطمئن هاتفيا على تمام استعدادات رائدي الفضاء الإماراتيين المنصوري والنيادي
  • حمدان بن محمد يطمئن هاتفيا على تمام استعدادات رائدي الفضاء الإماراتيين المنصوري والنيادي
  • حمدان بن محمد يطمئن هاتفيا على تمام استعدادات رائدي الفضاء الإماراتيين المنصوري والنيادي

ابوظبی، 10 ستمبر، 2019 (وام) ۔۔ دبئی کے ولی عہد شہزادہ شیخ حمدان بن محمد بن راشد آل مکتوم نے اماراتی خلاباز ھزاع المنصوری کو ٹیلیفون کرکے کہا کہ انہوں نے متحدہ عرب امارات کی قیادت اور لوگوں کا سر فخر سے بلند کردیا ہے.

 

انھوں نے اماراتی خلانورد کو 25 ستمبر کو یہ ٹیلی فون بین الاقوامی خلائی اسٹیشن کے سفر کیلئے تیاری کی خاطر 15 دن کی تنہائی کے مرحلے میں داخل ہونے سے پہلے کیا ۔ تنہائی کا مرحلہ خلائی مشن کی کامیابی کو یقینی بنانے کے لئے ایک اہم قدم ہے اور اس کا مقصد کسی بھی قسم کی بیماریوں سے بچنے کے لئے صاف ستھرے ماحول میں خلا بازوں کی حفاظت کو برقرار رکھنا ہے.

 

شیخ حمدان نے کہا کہ خلاباز متحدہ عرب امارات کا فخر ہیں اور ان کی کوششوں سے ملک کو خلائی شعبے میں تاریخی کامیابی حاصل کرنے میں مدد ملے گی۔ انھوں نے کہا کہ بین الاقوامی خلائی اسٹیشن کا یہ تاریخی سفر عرب دنیا میں ایک نئے سائنسی انقلاب کی راہیں کھولے گا۔ اس کارنامے سے متحدہ عرب امارات کے نائب صدر، وزیر اعظم اور دبئی کے حکمران شیخ محمد بن راشد آل مکتوم کے عرب دنیا کی شاندار تہذیب کو بحال کرنے کے وژن کو عملی جامہم پہنانے میں مدد ملے گی.

 

شیخ حمدان نے خلابازوں اور معاون ٹیموں کے پورے منصوبے کے دوران ان کی لگن اور وابستگی کا شکریہ ادا کیا.

 

اماراتی خلاباز روس کے دارالحکومت ماسکو کے گاگرین ریسرچ اینڈ ٹیسٹ کاسمونوٹ ٹریننگ سینٹر میں تربیت مکمل کرنے کے بعد قازقستان کے شہر بیکانورکے لئے روانہ ہوئے.

 

خلابازوں کے لئے گاگیرین سنٹر میں ایک الوداعی تقریب کا اہتمام کیا گیا۔ محمد بن راشد سپیس سنٹر ، ایم بی آر ایس سی کے چیئرمین حمد عبید المنصوری، ڈائریکٹر جنرل یوسف حمد الشیبیانی اور ایم بی آر ایس سی میں سائنسی اور تکنیکی امور کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر جنرل سیلم المیری نے بھی تقریب میں شرکت کی.

 

حمد المنصوری نے کہا کہ اب ہم ایک اہم مرحلے میں ہیں جو متحدہ عرب امارات کی دانشمندانہ قیادت اور اس کے عوام کے لئے اس قابل ذکر کامیابی کو انجام دینے میں کی جانے والی کوششوں کی عکاسی کرتا ہے.

 

انھوں نے کہا کہ ہمیں اپنی کامیابیوں پر فخر ہے۔ ھزاع المنصوری اور سلطان النیادی مرحوم شیخ زاید بن سلطان آل نھیان کے خواب کو پورا کرتے ہوئے خلاء میں متحدہ عرب امارات کے جھنڈے کو بلند کریں گے .

 

یوسف الشیبانی نے کہا کہ یہ ایک تاریخی واقعہ ہے جو متحدہ عرب امارات کے سائنسی تجربات سے نئے نتائج کے ساتھ انسانیت کو تقویت پہنچانے میں عالمی سائنسی برادری سے مربوط ہونے کے عزم کی عکاسی کرتا ہے.

 

انھوں نے کہا کہ ماسکو میں تربیت اور ٹیسٹوں کی کامیاب تکمیل کے بعد ہم مکمل پر اعتماد اور بین الاقوامی خلائی سٹیشن ، آئی ایس ایس میں اپنے پہلے مشن کے لئے تیار ہیں.

 

المنصوری بین الاقوامی خلائی ایجنسیوں جن میں روسی راس کوسموس اور یورپی خلائی ایجنسی (ای ایس اے) شامل ہیں کے تعاون سے سائنسی تجربات کریں گے۔ ان میں سے 6 تجربات آئی ایس ایس پر برین ڈی ٹی آئی، آسٹولوجی، موٹر کنٹرول، مائکروگریوٹی میں وقتی تاثر، فلوڈکس (خلا میں مائع حرکیات) اور ڈی این اےایم ایج کی سٹڈی کے لئے کیے جائیں گے.

 

المنصوری کا سائنسی مشن روس کی کاسموس ، جاپان ایرو اسپیس ایکسپلوریشن ایجنسی (جے اے ایکس اے) ، ناسا اور ای ایس اے سمیت بڑی عالمی خلائی ایجنسیوں کے ساتھ اسٹریٹجک شراکت داری کے دائرہ کار میں آتا ہے.

 

متحدہ عرب امارات کے پہلے خلاباز ھزاع المنصوری 100 فیصد ریشم سے بنا ہوا متحدہ عرب امارات کاپرچم، اپالو خلابازوں کے وفد کے ساتھ مرحوم شیخ زاید بن سلطان آل نھیان کی تصویر، قرآن مجید، متحدہ عرب امارات کے نائب صدر، وزیر اعظم اور دبئی کے حکمران شیخ محمد بن راشد آل مکتوم کی خلاء کے حوالے سے کتاب خلاء میں ساتھ لے کر جائیں گے.

 

ترجمہ: ریاض خان .

 

http://wam.ae/en/details/1395302785550

WAM/Urdu