امارات اور برطانیہ خواتین کوبااختیار بنانے اور جنسی تشدد کے خاتمے کے لئے مصروف عمل


ابوظہبی ، 11 ستمبر ، 2019 (وام) ۔۔ وزیر مملکت زکی نسیبة سے بدھ کے روز عرب امارات میں تعینات نائب برطانوی سفیر صوفیہ بریک نیل نے ملاقات کی اس موقع نائب وزیر ثقافتی امور عمر سیف غباش بھی موجود تھے.

 

وزارت خارجہ وبین الاقوامی تعاون میں ہونے والی اس ملاقات میں نسیبة نے دونوں ممالک کے درمیان نمایاں تعلقات کو سراہا خصوصاً ثقافتی شعبہ سمیت باہمی تعلقات کو مزید فروغ دینے کی خواہش کا اظہار کیا .

 

اس موقع پربریک نیل نے خواتین ، امن اور سلامتی کے پروگرام کی حمایت پر عرب امارات کے کردار کی تعریف کی اور کہا کہ امارات نے متعدد بین الاقوامی فورمز میں دلچسپی کا اظہار کیا ہے جس میں حالیہ دنوں میں اوسلو میں ناروے کی مشترکہ میزبانی میں ہونے والا" بحران زدہ علاقوں میں جنسی وصنفی تشدد کے خاتمے" کا فورم بھی شامل ہے.

 

انہوں نے دوہزار چودہ میں اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں بچیوں کے تعلیم کے حق کی قرارداد کے مسودہ کی تیاری میں عرب امارات کے کردار کا بھی ذکر کیا اورتعلیم کے حق کی اہمیت پر روشنی ڈالی.

 

نائب سفیر نے اٹھارہ سے بیس نومبر 2019 تک لندن میں ہونے والی جنسی تشدد کانفرنس کے بارے میں بھی بات کی۔ انہوں نے عرب امارات سمیت دنیا بھر کے ممالک کی شرکت کا خیرمقدم کیا.

 

نسبیہ نے خواتین کو بااختیار بنانے کے لئے عرب امارات کے عزم کا اعادہ کرتے ہوئے کہا کہ عرب امارات تنازعات کا شکار علاقوں میں خواتین کے تحفظ کو بہت اہمیت دیتا ہے.

 

انہوں نے جنرل ویمن یونین کی چیئر وومین ،سپریم کونسل برائے زچہ وبچہ کی صدر اور فیملی ڈویلپمنٹ فاونڈیشن کی سپریم چیئر وومین شیخة فاطمہ بنت مبارک کی جانب سے افغانستان میں قالین بافی اور اس صنعت کی مصنوعات کی فروخت کے لئے عالمی مارکیٹ کے قیام سے افغان خواتین کی مدد کے لئے شروع کردہ اقدام بارے بھی آگاہ کیا.

 

ملاقات میں دونوں ممالک کے عہدیداروں اور نمائندوں نے بھی شرکت کی.

 

ترجمہ۔تنویر ملک.

 

https://wam.ae/en/details/1395302785795

WAM/Urdu