سعودی عرب میں حملوں کے بعد فجیرۃ کے ریفائنڈ پیدواری ذخائرہ میں 13 فیصد اضافہ


فجیرۃ ، 18 ستمبر ، 2019 (وام) ۔۔ فجیرۃ میں مشرق وسطی کے صاف پٹرولیم مصنوعات کے ذخائر میں 16 ستمبر کو ختم ہونے والے ہفتے پر 13 فیصد اضافہ ہوا ۔ یہ صورتحال سعودی عرب میں تیل کی دو تنصیبات پر حملوں کے بعد پیدا ہوئی ۔ ان تفصیلات کا اعلان فجیرۃ آئل انڈسٹری زون ایف او آئی زیڈ کی طرف سے بدھ کو جاری اعداد و شمار میں کیا گیا جس کے مطابق یہ اضافہ تمام کیٹیگریز میں رکارڈ کیا گیا – اس ڈیٹا کے مطابق ایک ہفتہ پہلے 13 فیصد کمی کے بعد کل انوینٹریز کی مقدار 675ء19 ملین بیرل رہی جو کہ دو ہفتوں کی بلند ترین شرح ہے ۔ سب سے زیادہ اضافہ مڈل ڈسٹلیٹس میں ہوا جو 43 فیصد بڑھ کر 102ء2 ملین بیرل رہا ۔ اس کیٹیگری میں گیسوآئل ، ڈیزل ، میرین گیسوآئل ، جیٹ فیول اور کیروسین شامل ہیں – سعودی عرب میں حملوں کے بعد مشرقی سویز میں گیسوآئل کی قیمتوں میں ہفتے کو اضافہ دیکھنے میں آیا ۔ ایس اینڈ پی گلوبل پلیٹز اینالٹکس کے مطابق یورپ میں یہ مصنوعات بھیجنے کیلئے قیمتوں کا رحجان بدستور بہتر ہے ۔ سنگاپور میں قائم اس ادارے کی رپورٹ کے مطابق اگر سعودی عرب اپنی برآمدات کیلئے مقامی ریفائنریز کی خاطر کروڈ آئل کم کرتا ہے تو یہ مغرب کیلئے مزید اضافے کا باعث ہوگا – ہیوی ڈسٹلیٹس کی پیداوار میں 14 فیصد اضافہ دیکھنے میں آیا جو کہ کل 64ء11 ملین بیرل رہا ۔ ایک ٹریڈر کا کہنا ہے کہ سعودی عرب کے واقعات سے سوائے قیمتوں کے باقی بنکرنگ پر اثر مرتب ہونے کی توقع نہیں ہے ۔ فجیرۃ 380 سی ایس ٹی بنکر قیمت منگل کو 75ء65 ڈالر سے بڑھ کر 25ء529 ڈالر فی میٹرک ٹن ہوگئیں جو کہ رواں سال کی سب سے بلند قیمت ہے – لائٹ ڈسٹلیٹس میں 5 فیصد اضافہ ہوا جوکہ 933ء5 ملین بیرل رہیں ۔ ایف او آئی زیڈ کی درخواست پر فجیرۃ کے تمام کمرشل ٹرمینل آپریٹرز ہفتہ وار سٹاک رپورٹنگ کرتے رہے ۔ اس میں کل گیارہ سٹوریج شامل ہیں – ترجمہ ۔ تنویر ملک – http://wam.ae/en/details/1395302787635

WAM/Urdu