امارات کی باربودا میں گرین توانائی منصوبے کے لئے شراکت داری


ابوظہبی ، 19 ستمبر ، 2019 ( وام ) ۔۔ متحدہ عرب امارات کیریبین قابل تجدید توانائی فنڈ ، یو اے ای۔ سی ای آر ایف نے ستمبر 2017 میں سمندری طوفان ارما سے مکمل تباہ ہونے والے جزیرے باربودامیں بجلی کی بحالی کے لئے پارٹنرشپ کا اعلان کیا ہے.

 

دوسرے شراکت داروں میں حکومت انٹی گوا اور باربوداکی وزارت برائے پبلک یوٹیلٹیز، شہری ہوا بازی ، ٹرانسپورٹ اور توانائی ، کیریکوم ڈویلپمنٹ فنڈ (سی ڈی ایف) اور نیوزی لینڈ کی وزارت برائے امور خارجہ وتجارت شامل ہیں.

 

معاہدے کے تحت متحدہ عرب امارات کیریبین خطے میں اپنی نوعیت کے سب سے بڑے قابل تجدید توانائی منصوبے کے لئے انٹی گوا اور باربوداکو ستاون لاکھ ڈالر کی مدد فراہم کرے گا.

 

انٹی گوا اور باربوداحکومت نے بھی سی ڈی ایف کے توسط سے 10 لاکھ ڈالر مختص کیے ، اور نیوزی لینڈ حکومت نے اس منصوبے کی مالی اعانت اور سمندری ڈیزل بجلی گھر کی تعمیر کے لئے پچاس ہزار ڈالر دئے ہیں.

 

اس منصوبے کو امارات کی وزارت خارجہ وبین الاقوامی تعاون ، ابو ظہبی فنڈ برائے ترقی ، اے ڈی ایف ڈی ، اورمصدر کی شراکت سے عرب امارات ۔سی ای آر ایف کے ذریعہ مکمل کیا جائے گا.

 

شراکت داری پر تبصرہ کرتے ہوئے وزارت خارجہ وبین الاقوامی تعاون کے نائب وزیر برائے امور بین الاقوامی ترقی سلطان الشامسی نے باربوداکے عوام کی خوشحالی کے اس اہم منصوبے پر اظہار اطمینان کیا .

 

"باربودا میں سمندری طوفان ارما کی وجہ سے ہونے والی تباہی کے بعد ، ہم نہ صرف اس جزیرے کو بجلی کی بحالی کی کوشش کر رہے ہیں بلکہ ہم اسے مزید بہتر بنانے کے لئے کام کریں گے۔ ماحول دوست شمسی توانائی سے بجلی فراہم کرنے سے جزیرے میں توانائی بحران حل ہوگا اور ماحولیاتی اثرات بھی کم ہوںگے.

 

انٹی گوا اور باربوداکے پبلک یوٹیلٹیز ، شہری ہوا بازی ، ٹرانسپورٹ اور توانائی کے وزیر ، سررابن ایئر ووڈ نے توانائی منصوبے کے لئے تعاون کرنے پر تمام شراکت داروں کا شکریہ ادا کیا.

 

اے ڈی ایف ڈی کے ڈائریکٹر جنرل محمد سیف السویدی کا کہنا ہے کہ" کیریبین جزائر پر مشتمل ممالک توانائی کے پائیدار وسائل سے مالا مال ہیں۔اے ڈی ایف ڈی کو صاف توانائی کے متبادل منصوبوں میں شراکت داروں کے ساتھ مل کر کام کرنے پر خوشی ہے۔ "

مصدرکے سی ای او محمد جمیل الرمحی نے کہا کہ سمندری طوفان سے محفوظ شمسی توانائی کے منصوبے کیریبین خطے کے لئے انتہائی اہم ہیں۔ باربوداجزیرے کے باشندوں کو بجلی کی قابل اعتماد اور پائیدار فراہمی کے اس اہم منصوبے کے لئے دوسرے شراکت داروں کی مدد کرنا ایک اعزاز ہے۔"

سی ڈی ایف، کے سی ای او روڈینالڈ سومر نے کہا کہ اس پاور منصوبے میں سی ڈی ایف کے 2015-2020 کے اسٹریٹجک منصوبے کو مدنظر رکھتے ہوئے دس لاکھ ڈالر کی شراکت شمسی توانائی کے آلات کے لئے مختص کی گئی ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ"یہ منصوبہ کیریکوم انرجی پالیسی سے مطابقت رکھتا ہے ، جس کا مقصد قابل تجدید اور صاف توانائی کے ذرائع کی استعداد بڑھانے میں تیزی لانا ہے۔"

امارات میں نیوزی لینڈ کے سفیر میتھیو ہاکنس کا کہنا ہے کہ" نیوزی لینڈ کی وزارت برائے امور خارجہ وتجارت بھی انٹی گوا اور باربودامیں اس اقدام کی حمایت پر خوش ہے۔ توانائی سیکیورٹی اور ماحولیات کے لئے محفوظ بنیادی ڈھانچے کی مددکرنا کیریبین اور بحر الکاہل کے چھوٹے جزائر والے ممالک کے استحکام کی کلید ہے۔ یہ اقدام کیریبین اور بحر الکاہل کے چھوٹے جزائر پر مشتمل ریاستوں اورانتہائی کمزور کمیونیٹیز کے لئے قابل تجدید توانائی منصوبوں کی فراہمی کے لئے عرب امارات کے ساتھ ہماری جاری شراکت داری کا حصہ ہے۔"

ترجمہ۔تنویر ملک.

 

http://www.wam.ae/en/details/1395302787922

WAM/Urdu