امارات کی وزارتوں اور اتحاد برائے عالمی پائیداریت میں تعاون کا معاہدہ


ابوظہبی ، 9 اکتوبر ، 2019 ( وام ) ۔۔ متحدہ عرب امارات کی وزارت برائے کمیونٹی ڈویلپمنٹ ، ایم او سی ڈی ، اور وزارت برائے موسمیاتی تبدیلی وماحولیات،ایم او سی سی اے ای نے اتحاد برائے عالمی پائیداریت ، اے جی ایس کے ساتھ گردشی معیشت سے متعلق مفاہمت کی یادداشت پر دستخط کیے ہیں۔ گردشی معیشت کا مقصد ضیاع کو ختم کرتے ہوئے وسائل کے مستقل استعمال کو معیشت میں زیادہ سے زیادہ عرصے تک برقرار رکھنے کی حوصلہ افزائی کرنا ہے۔ ایم او یو کے بعد امارات حکومت نے عالمی اقتصادی فورم برائے مشرق وسطی اور شمالی افریقہ کے ساتھ 'اسکیل 360' اقدام پر دستخط کرنے والا پہلا ملک ہونے کا اعلان کیا جس کا مقصد زیادہ گردشی معیشت کا حامل ملک بننے کی جانب پیش رفت کرنا ہے۔ ایم او یو پر اے جی ایس کی چیف ایگزیکٹو افسرشیخہ شما بنت سلطان بن خلیفہ آل نھیان ، وزیر برائے کمیونٹی ڈویلپمنٹ حصہ عیسی بوحمید اور وزیر برائے موسمیاتی تبدیلی وماحولیات ڈاکٹر ثانی بن احمد الزیودی نے دستخط کئے۔ اس حوالے سے شیخہ شما بنت سلطان نے کہا کہ "ہم مختلف شعبوں کے مابین صنعتی راہنما بننے کے خواہاں ہیں تاکہ انہیں جدید ٹیکنالوجی اور سلوشنز فراہم کریں ۔ مجھے یقین ہے کہ اس ٹیکنالوجی پلیٹ فارم کے ذریعے ہم متحدہ عرب امارات اور وسیع تر خطے میں معاشرتی اور ماحولیاتی اثرات مرتب کریں گے۔ حصہ عیسی بوحمیدنے کہا کہ مشترکہ مفاہمت پائیدار ترقی کے مستقبل کے لئے حکومتی شراکت کا اشارہ ہے ، متحدہ عرب امارات مختلف شعبوں میں مسابقت کو فروغ دے رہا ہے ، جو متحدہ عرب امارات کے ویژن 2021 اورسو سالہ حکمت عملی 2071کے مطابق معاشی اور تکنیکی جدت کے عالمی مرکز کے طور پر اس کی حیثیت کی عکاسی کرتا ہے۔ ڈاکٹر الز یودی نے کہا کہ" پائیدار پیداوار اور کھپت کا تسلسل عرب امارات کی اہم حکمت عملی کا لازمی جزوہے۔ اس ترجیح کے حصول کے لئے ملک کی قیادت گردشی معیشت پر منتقلی پر عمل پیرا ہے۔"

ایم او یو کا مقصد نوجوانوں کے لئے مائیکرو پروجیکٹس کی مدد کرتے ہوئے متحدہ عرب امارات میں گردشی معیشت کو مزید ترقی دینا ہے۔

ترجمہ۔تنویر ملک

http://wam.ae/en/details/1395302793421

WAM/Urdu