ورلڈ فوڈ پروگرام کی کھانے پینے کی چیزوں کا ضیاع کم کرنے کی عالمی مہم کا آغاز


دبئی ، 9 اکتوبر ، 2019 (وام) ۔۔ اقوام متحدہ کے ورلڈ فوڈ پروگرام ، ڈبلیو ایف پی نے بڑی مقدار میں روزانہ ضائع ہونے والی کھانے پینے کی اشیا کے حوالے سے شعور بیدار کرنے کی عالمی مہم "ضیاع کو روکو " کا آغاز کیا۔ مہم کے تحت عرب امارات میں ڈبلیو ایف پی آفس نے دبئی میں جمیرا بیچ ہوٹل کے زیر اہتمام ایک پروگرام کا نعقاد کیا۔ وزیر مملکت برائے تحفظ خوراک مریم حارب المھیری کی موجودگی میں ہونے والے اس پروگرام میں اقوام متحدہ کے ریذیڈینٹ کوآرڈینیٹر ، اقوام متحدہ کی ایجنسیوں کے نمائندوں ، این جی اوز ، ممتاز شخصیات کے باورچیوں ، فوڈ بلاگرز ، سوشل میڈیا اور میڈیا سے وابستہ افراد نے شرکت کی ۔ المھیری نے کہا کہ"میں متحدہ عرب امارات کے عوام ، فوڈ اینڈ مشروبات کی صنعت ، مہمان نوازی کے شعبے اور عرب امارات میں صارفین کو دعوت دیتی ہوں کہ وہ کھانے کے ضیاع کو کم سے کم کرنے کا عزم کریں۔ # "ضیاع کو روکو " لوگوں کو تعلیم دینے کا ایک آسان طریقہ ہے کہ وہ کس طرح کھانے کا ضیاع کم کرسکتے ہیں اور بہتر کھانے انتخاب کرتے ہوئے دنیا میں بھوک کو کم کرنے میں معاون ثابت ہوسکتے ہیں۔"

ورلڈ فوڈ پروگرام نے کھانے کے ضیاع اور اس کی روک تھام کو اجاگر کرنے کی مہم کے تحت 30 سیکنڈ کی ویڈیو بھی لانچ کی ہے۔ عرب امارات میں ورلڈ فوڈ پروگرام دفترکے ڈائریکٹراور جی سی سی کے لئے نمائندے مجید یحیی نے کہا کہ # "ضیاع کو روکو " ایک ایسی مہم ہے جو کھیت سے کھانے والے تک فوڈ سپلائی چین میں شامل ہر فرد سے متعلق ہے۔ ہمیں کھانے کو ضائع کرنے باز رہنے کی ضرورت ہے کیونکہ کھانے کو ضائع کرنا صرف پیداوار کا ضائع کرنا ہی نہیں بلکہ یہ سرمایہ کاری کی رقم ، مزدوری اور وسائل کو ضائع کرنا ہے۔ # "ضیاع کو روکو " کا عہد کرنے کے لئے ان آسان اقدامات پر عمل کریں: 1 کھانے کی چیز کے لئے اپنے فریج سے ایسی چیز نکالیں جس کی میعاد ختم ہونے کے قریب ہو لیکن وہ کھانا محفوظ ہو 2. اپنی کھانے کی چیز کے ساتھ سیلفی لیں(اسے کھانا نہ بھولیں) 3. # "ضیاع کو روکو " کا استعمال کرتے ہوئے سوشل میڈیا پر اپنی تصویر کو شیئر کریں۔ 4 اپنے عہد کو ایک قدم اور آگے بڑھائیں ڈنر پارٹی کی میزبانی کریں اور دوسروں کو بھی ایسا کرنے کی ترغیب دیں۔ جمیرا گروپ کے کھانے پکانے کے چیف افسرمائیکل ایلس نے کہاکہ "غذا کے ضیاع کو کم سے کم کرنا جمیرا گروپ کی پائیداری کے حوالے سے جاری کوششوں کا حصہ ہے اور ہمیں اس اہم مہم کا حصہ ہونے پر فخر ہے۔"

ترجمہ۔ تنویر ملک http://wam.ae/en/details/1395302793498

WAM/Urdu