متحدہ عرب امارات فتویٰ کونسل کے چیئرمین کی پوپ فرانسس سے ملاقات


ویٹی کن سٹی،28 اکتوبر، 2019 (وام) ۔۔ متحدہ عرب امارات کے فتویٰ کونسل کے چیئرمین شیخ عبد اللہ بن بیہ نے کیتھولک چرچ کے سربراہ پوپ فرانسس سے ملاقات کی ہے اور ابو ظبی کے ولی عہد اور متحدہ عرب امارات کی مسلح افواج کے ڈپٹی سپریم کمانڈر شیخ محمد بن زید آل نھیان کی طرف سے نیک خواہشات کا پیغام پہنچایا۔ ملاقات ویٹی کن سٹی کے اپوسٹولک محل میں ابراہیمی توحید پسند مذاہب کے نمائندوں کی ملاقات کے دوران ہوئی جس میں رضاکارانہ خودکشی اور اس میں مدد دینے کے رجحان کی مذمت کی گئی۔ ابراہیمی مذاہب کے نمائندوں کی طرف سے دستخطوں کے بعد جاری ہونے والے ایک پوزیشن پیپر میں کہا گیا ہے کہ وہ کسی بھی طرح براہ راست یا جان بوجھ کر اپنی جان لینے اور معالج کی مدد سے خودکشی کی مخالفت کرتے ہیں کیونکہ یہ بنیادی طور پر قیمتی انسانی زندگی کے منافی ہے اور اسی وجہ سے یہ فطری طور پر اخلاقی اور مذہبی طور پر غلط ہے اس لئے اسے بغیر کسی استثنیٰ کے منع کیا جانا چاہئے۔ اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے شیخ عبد اللہ بن بیہ نے کہا کہ یہ ملاقات نیکی اور تقویٰ میں تعاون کو یقینی بنانے کی کوششوں کا حصہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ جسم کا تحفظ اسلامی قانون اور بین المذاہب اقدار کا ایک اہم مقصد ہے جو فرد کے جامع احترام کو یقینی بنانے کی اہمیت کی نشاندہی کرتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارا یہ اجلاس مشترکہ مذہبی اقدام کے سلسے میں ایک نیا قدم ہے۔ یہ پہلا موقع ہے جب آسمانی مذاہب نے بنیادی اقدار اور اثاثوں سے متعلق معاہدے پر اتفاق کیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ متحدہ عرب امارات ہمیشہ ابراہیمی خاندان کی مشترکہ اقدار اور دیگر تمام عظیم انسانی اصولوں کو برقرار رکھنے کے لئے کوشاں ہے جو باہمی تعاون کی حوصلہ افزائی کرتے ہیں۔ شیخ عبد اللہ بن بیہ نے کہا کہ یہ کوششیں متحدہ عرب امارات میں رواداری کے سال کے موافق ہیں جس میں پوپ فرانسس اور جامع الازہر کے امام شیخ ڈاکٹر احمد الطیب کے درمیان انکے دورہ متحدہ عرب امارات کے دوران انسانی برادری کی دستاویز پر دستخط کئے گئے تھے۔ ترجمہ: ریاض خان ۔ https://wam.ae/en/details/1395302798277

WAM/Urdu