نھیان بن مبارک نے رواداری کے فروغ کا منصوبہ شروع کردیا


شارجہ، 4 نومبر ، 2019 (وام) ۔۔ رواداری کے وزیر شیخ نھیان بن مبارک آل نھیان نے رواداری اور انسانی برادری سے متعلق "Innovative Project" کا آغاز کیا ہے۔ پراجیکٹ میں رواداری سے متعلق ایک ہزار دستاویزات اور ڈیجیٹل آڈیو ویژول اور تحریری آرٹ ورکس شامل ہیں۔ شیخ نھیان نے تمام لوگوں سے درخواست کی ہے کہ وہ اس منصوبے کے بارے میں آگاہی حاصل کریں اور وزارت رواداری کے ساتھ علم کے فروغ کے سفر میں قوم کی حوصلہ افزائی کریں۔ انھوں نے کہا کہ متحدہ عرب امارات رواداری اور انسانی برادری کا مرکز ہے۔ انہوں نے کہا کہ شارجہ بین الاقوامی کتاب میلے کے موقع پر منعقدہ "Tolerance Knowledge Content Enrichment Forum" کا مقصد اس منصوبے کی نمائش کرنا ہے تاکہ نہ صرف متحدہ عرب امارات بلکہ پوری دنیا میں افراد اور معاشروں میں رواداری کو طرز زندگی بنایا جاسکے ۔ وزارت نے متحدہ عرب امارات اور عرب خطے سے تعلق رکھنے والے 16 ادیبوں، ناول نگاروں اور شاعروں کے ساتھ معاہدے پر دستخط کیے جس کے تحت وہ رواداری کی اقدار کو فروغ دینے کیلئے اشاعتوں کا سلسلہ جاری کریں گے ۔ تقریب میں دو الگ الگ سیشن بھی منعقد ہوئے۔ پہلے سیشن میں تخلیقی تحریروں میں رواداری کو اجاگر کرنے جبکہ دوسرے میں رواداری کو فروغ دینے میں بصری فنون کی شراکت پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ دونوں مباحثو ں میں ممتاز دانشوروں اور ثقافتی شخصیات نے شرکت کی۔ شیخ نھیان نے کہا کہ "Knowledge Development Program in Tolerance" کا ہدف معاشرے کے تمام طبقات ہیں تاکہ ان میں آرٹ پروڈکشن کے تمام میڈیمز کے ذریعے رواداری کی اقدار کو فروغ دیا جاسکے۔ اپنے اختتامی کلمات میں انہوں نے کہا کہ یہ پروگرام مصنفین اور پبلشروں کے ساتھ معاہدوں پر دستخط کرنے کے ساتھ مقابلوں کا انعقاد کرنا چاہتا ہے تاکہ عام لوگوں کو رواداری کے بارے میں اپنے خیالات کا اظہار کرنے کی ترغیب ملے۔ ترجمہ: ریاض خان ۔ http://www.wam.ae/en/details/1395302800021

WAM/Urdu