متحدہ عرب امارات ، رواداری اور پرامن بقائے باہمی کا منفرد نمونہ


احسان المیسیری سے ابوظہبی ، 5 نومبر ، 2019 (وام) ۔۔ انتہا پسندی کا مقابلہ کرنے اور دیگر ثقافتوں کے ساتھ کشادگی کو فروغ دینے کے لئے متحدہ عرب امارات کی جانب سے سال کے آغاز سے شروع کیے گئے اہم اقدامات اس کے ویژن کی عکاسی کرتے ہیں ، اہم کانفرنسوں اور فورمز کے انعقاد سے عرب امارات ان اقدار کوپھیلانے کا ایک اہم علاقائی اور بین الاقوامی مرکز بن گیا ہے۔ حکومتی اور نجی حکام اور غیر منافع بخش تنظیموں کے زیر اہتمام ماہانہ بنیادوں پر خصوصی پروگراموں اور اقدامات کے انعقاد کے ساتھ ساتھ بیرون ملک امارات کے سفارتخانوں کی طرف سے ان ایونٹس کو بیرون ملک فروغ دینے کی کوششوں کے ساتھ ، پوری اماراتی کمیونٹی کی جانب سے رواداری اور بقائے باہمی کی اقدار کو اجاگر کیا گیا ہے۔ متحدہ عرب امارات کے پرامن بقائے باہمی اور انسانی اخوت کی اقدار کو مستحکم کرنے کے لئے ، ستمبر میں ، ابو ظہبی میں محکمہ کمیونٹی ڈویلپمنٹ نے 18 مقامی عبادتگاہوں کو غیر مسلموں کے حوالے کیاا علم اور ثقافتی رواداری کا فروغ متحدہ عرب امارات کا مقصد کمیونٹی کے علم اور ثقافتی رواداری کو مستحکم بنانا ہے اور فورمز کے انعقاد کے ذریعے ، برادریوں کے درمیان ہم آہنگی کے قیام میں رواداری کے کردار پر تبادلہ خیال کرنا ہے۔ اس فریم ورک کے تحت ، زایدہاوس برائے اسلامک کلچر نے "معاشرتی ہم آہنگی میں رواداری کا کردار" کے عنوان کے تحت "رواداری فورم" کے تیسرے ایڈیشن کا انعقادکیا۔ فورم کے دوران ، سات لاکھ نوے ہزار سے زیادہ افراد نے 'معاہدہ برائے ملین روادار' پر دستخط کیے۔ توقع کی جارہی ہے کہ نومبر کے آخر تک اس میں شامل ہونے والوں کی تعداد دس لاکھ سے تجاوز کر جائے گی۔ "انسانی بھائی چارہ :متحدہ عرب امارات کا روادار دنیا کا ویژن ،" کے عنوان سے ایک اور فورم کا الاتحاد اماراتی اخبار نے انعقاد کیا۔ رواداری کی اقدار بارے شعور کو اجاگر کرنے کے لئے بین الاقوامی انسٹی ٹیوٹ برائے رواداری نے ، محمد بن راشد المکتوم گلوبل انیشی ایٹو کے تحت عالمی رواداری نیٹ ورک کا آغاز کیا۔ عالمی رواداری نیٹ ورک کا مقصد امن کے ماہرین کو ایک چھت تلے جمع کرکے ، پوری دنیا کی کمیونٹیز میں رواداری ، امن ، ہم آہنگی اور بقائے باہمی کے اصولوں کو فروغ دینے کے لئے ایک عالمی پلیٹ فارم بننا ہے۔ رواداری کو فروغ دینے کے لئے وسیع اماراتی سفارتی سرگرمیاں دنیا بھر میں متحدہ عرب امارات کے سفارت خانوں نے ملک کے انسان دوست مشن کے حصول کے لئے ایک وسیع سفارتی سرگرمیوں کا اہتمام کیا اور بہت سے بین الاقوامی پروگرامزور فورمز میں حصہ لیا۔ اس فریم ورک کے تحت ، آسٹریا میں اماراتی سفارت خانے نے ویانا میں شاہ عبد اللہ بن عبد العزیز بین الاقوامی مرکز برائے بین المذاہب اور بین الثقافتی مکالمہ کے تحت منعقدہ ایک بین الاقوامی کانفرنس میں حصہ لیا۔ یونان میں متحدہ عرب امارات کے سفارت خانے نے رواداری کو فروغ دینے میں متحدہ عرب امارات کے کلیدی کردار کو اجاگر کرنے کے لئے "ہفتہ رواداری " کا اہتمام کیا اس پروگرام میں مذہبی علما ، اسکالرز اور یونان کی حکومت کے عہدیداروں نے شرکت کی ، اور انسانی برادری کی دستاویز کے اصولوں پر روشنی ڈالی۔ متحدہ عرب امارات کے پرامن مذہبی بقائے باہمی کے نظریہ کی مناسبت سے ، نائیجیریا میں متحدہ عرب امارات کے سفارت خانے نے ابوجا میں مذہبی رواداری اور قبولیت فورم کو فروغ دینے کے سلسلے میں بین المذاہب رواداری کے مکالمے کا اہتمام کیا ۔ اس پروگرام میں اسلام ، عیسائیت اور دیگر مذاہب میں اعتدال پسندی اور رواداری کی اقدار پر تبادلہ خیال کیا گیا ، اور مختلف برادریوں میں پرامن بقائے باہمی اور احترام کی اہمیت پر روشنی ڈالی گئی۔ ترجمہ۔تنویر ملک http://wam.ae/en/details/1395302800188

WAM/Urdu