گلوبل کونسل برائے امن و رواداری کا ریاض معاہدے پر اظہار ستائش


ابوظہبی ، 6 نومبر ، 2019 (وام) ۔۔ امن و رواداری کیلئے گلوبل کونسل نے ریاض معاہدے کو سراہا ہے جو کہ یمن کی حکومت اور جنوبی عبوری کونسل کے درمیان گزشتہ روز خادم الحرمین شریفین کی سرپرستی میں انجام پایا – اس معاہدے کے موقع پر ابوظہبی کے ولی عہد اور عرب امارات کی مسلح افواج کے نائب سپریم کمانڈر عزت مآب شیخ محمد بن زاید النھیان اور سعودی عرب کے ولی عہد ، نائب وزیر اعظم اور وزیر دفاع شہزادہ محمد بن سلمان بن عبدالعزیز اور یمن کے صدر عبد ربہ منصور ھادی بھی موجود تھے – گلوبل کونسل کے صدر احمد بن محمد الجروان نے کہا ہے کہ یہ معاہدہ اس امر کا غماز ہے کہ یمن کے فریقین اپنی داخلی اختلافات اور مسائل کے باوجود ، منطق کے حامی اور رواداری کو فروغ دینے کے خواہمشند ہیں ۔ انہوں نے اس امید کا اظہار بھی کیا کہ یہ معاہدہ یمن میں بحران ختم کرکے استحکام کے نئے دور کا پیش خیمہ ثابت ہوگا – انہوں نے اس تاریخی معاہدے کیلئے متحدہ عرب امارات اور سعودی عرب کے کردار کو بھرپور سراہتے ہوئے یمنی حکومتی اور جنوبی عبوری کونسل کے معاون کردار کی بھی تعریف کی ۔ انہوں نے کہاکہ یہ معاہدہ یمن کے عوام کو حوثی گروپ کیخلاف متحدہ کرتے ہوئے دہشت گردی کیخلاف برسرپیکار عرب اتحاد کی کاوشوں میں معاون بنے گا – کونسل کے بیان میں کہا گیا ہے کہ عرب ممالک نے حالیہ برسوں میں کئی بحران دیکھے اور ان پر کامیابی سے قابو بھی پایا ، یہ پیشرفت تقسیم ، دہشت گردی اور تفرقہ کیخلاف انکی کامیابیوں کا ثبوت ہے ۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ اس معاہدے میں یمن میں معاشی بحالی ، پائیدار ترقی کی بنیاد کا قیام اور انسداد کرپشن کے اصول بھی متعین کیئے گئے ہیں –

ترجمہ - تنویر ملک –

http://wam.ae/en/details/1395302800551

WAM/Urdu