دیوا نے سمندری پانی صاف کرنے کے منصوبے کیلئے 9درخواستوں کو شارٹ لسٹ کرلیا


دبئی، 7 نومبر ، 2019 (وام) ۔۔ دبئی الیکٹرسٹی اینڈ واٹر اتھارٹی، دیوا نے نو اہل بولی دہندگان کو یومیہ 120 ملین گیلن سمندری پانی صاف کرنے کے ریورس اوسموس پلانٹ کے لئے تجاویز کی درخواست جاری کردی ہے۔ اتھارٹی کی طرف سے پانی صاف کرنے کے کسی خودمختار ادارے ، IWPکو جاری کیا جانے والا یہ پانی صاف کرنے کا پہلا منصوبہ ہے۔ دیوا نے محمد بن راشد آل مکتوم شمسی پارک منصوبوں میں بحلی پیدا کرنے کے خودمختار ادارے، آئی پی پی ماڈل کی کامیابی کے بعد حسیان پانی صاف کرنے کے پلانٹ کے لئے آئی ڈبلیو پی کی خدمات حاصل کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ توقع ہے کہ یہ منصوبہ 2023 میں پانی صاف کرنے کا کام شروع کردے گا۔۔ سمندری پانی کو صاف کرنے کے اس پلانٹ میں جدید ترین ٹیکنالوجی کا استعمال کیا جائے گا۔ پلانٹ دیوا کے واٹر نیٹ ورک کو پائیدار سپلائی کی فراہمی کو یقینی بنائے گا۔ دیوا کے ایم ڈی اور سی ای او سعید محمد الطائر نے کہا کہ اس منصوبے کی تعمیر پائیدار ترقی کو فروغ دینے اور دبئی کی کل بجلی کا 75 فیصد کلین انرجی اسٹریٹیجی 2050 کے حصول کے لئے نائب صدر، وزیر اعظم اور دبئی کے حکمران شیخ محمد بن راشد آل مکتوم کے وژن کی تائید ہے۔ انھوں نے کہا کہ ہم ریورس اوسموس پر مبنی پروڈکشن پلانٹس بنا رہے ہیں جس میں کم توانائی کی ضرورت ہے اور یہ پانی صاف کرنے کے لئے زیادہ پائیدار انتخاب ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ منصوبہ دبئی میں پانی کو صاف کرنے کی گنجائش کو 470 ملین گیلن یومیہ سے بڑھا کر 750 ملین گیلن یومیہ کرنے کی دیوا کی حکمت عملی کا ایک حصہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ دیوا اس وقت بجلی اور پانی کی مشترکہ پیداوار کے ذریعے پانی کو صاف کررہا ہے اور اس سلسلے میںMSF ٹیکنالوجی استعمال کی جارہی ہےجو بجلی کی پیداوار سے پیدا ہونے والے فضلے کی حرارت پر منحصر ہے۔ دیوا بھی پانی کو صاف کرنے کے لئے RO ٹیکنالوجی کا بھی استعمال کرتی ہے جو پوری دنیا میں استعمال ہوتی ہے۔ دیوا کو اس منصوبے کیلئے اب تک اہلیت کی دستاویزات کے لئے 34 درخواستیں موصول ہوچکی ہیں ۔ دیوا نے تمام درخواستوں کی جانچ پڑتال کے بعد نو درخواست گزاروں کو شارٹ لسٹ کردیا ہے۔ بولی جمع کروانے کی آخری تاریخ 31 جنوری 2020 ہے۔ ترجمہ: ریاض خان ۔ http://wam.ae/en/details/1395302800871

WAM/Urdu