"اکیسویں صدی میں جنگ" کے موضوع پر سالانہ کانفرنس ابوظبی میں ختم ہوگئی


ابوظبی، 7 نومبر ، 2019 (وام) ۔۔ نائب صدر، وزیر اعظم اور دبئی کے حکمران شیخ محمد بن راشد آل مکتوم کی سرپرستی میں وزارت دفاع کے زیر اہتمام "اکیسویں صدی میں جنگ" کے موضوع پر ہونے والی چوتھی سالانہ کانفرنس اختتام پزیر ہوگئی ہے۔ دو روزہ کانفرنس ابو ظبی میں امارات سنٹر برائے اسٹریٹجک اسٹڈیز اینڈ ریسرچ اور آرمڈ فورسز آفیسرز کلب میں منعقد ہوئی۔ وزارت دفاع میں پالیسی و تعاون کے ایگزیکٹو ڈیپارٹمنٹ کے سربراہ میجر جنرل پائلٹ مبارک علی النیادی نے کہا کہ کانفرنس میں ماہرین کے ساتھ ڈیجیٹل جنگ کا مطالعہ کیا گیا ۔ انہوں نے کہا کہ ہمارا مشن ڈیجیٹل جنگ کے مختلف پہلوؤں کے بارے میں زیادہ گہرائی سے سوچنا ہے اور ہمارے تجزیوں کو اسٹریٹجک سطح پر رہنا چاہئے۔ تاہم انکا کہنا تھا کہ اب ہمیں تکنیکی تجارتی مہارت اور پالیسی کے تناظر میں اپنے تجزیوں کو بہتر بنانا ہوگا۔ کانفرنس کے دوسرے دن اپنے کلیدی خطاب میں علی نیادی نے کہا کہ وزارت دفاع اپنے اسٹریٹجک شراکت داروں کے ساتھ مل کر ڈیجیٹل جنگ میں فعال فتح حاصل کرنے اور اس سے متعلقہ حل تلاش کرنے کے طریقوں پر تبادلہ خیال کرنا چاہتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ یونیورسٹیوں، اکیڈمیوں، ایجنسیوں اور افراد کے ساتھ وزارت کی اسٹریٹجک شراکت داری مہارت کے انوکھے ذرائع ہیں جو ورکشاپوں میں کلیدی عنوانات کے مطالعہ کی ہماری کوششوں کی تائید کرتے ہیں۔ مقامی اور بین الاقوامی ماہرین اور مقررین کی شرکت سے کانفرنس کے پہلے دن کے نتائج اور سفارشات پر آرمڈ فورسز آفیسرز کلب اور ہوٹل میں آٹھ ماہر ورکشاپس کا انعقاد کیا گیا۔ ورکشاپس کے دوران کانفرنس کے مرکزی خیال "ڈیجیٹل جنگ جیتنا" سے متعلق متعدد موضوعات پر تبادلہ خیال کیا گیا جن میں مصنوعی ذہانت کے ذریعے سائبر جنگ میں فیصلے کرنے میں معاونت کا کردار شامل تھے۔ ورکشاپس میں ڈیجیٹل دور میں قیادت اور ڈیجیٹل خطرات سے نمٹنے کے لئے قوم کی تیاری پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔ کانفرنس کے شرکاء جن میں سینئر قائدین، ​​ماہرین اور مقامی، علاقائی اور بین الاقوامی سول و فوجی ماہرین تعلیم شامل ہیں نے ڈیجیٹل ٹیکنالوجی اور مصنوعی ذہانت پر مبنی سمارٹ اسٹیٹ بنانے کے لئے متحدہ عرب امارات کی کوششوں کا جائزہ لیا۔ انہوں نے اس امر کی تصدیق کی کہ متحدہ عرب امارات سائبر خطرات سمیت مختلف خطرات کے خلاف اپنے تحفظ اور قومی فوائد کے دفاع کے اپنے جائز حق کی پاسداری کرتا ہے اور وزارت دفاع اپنے تمام قومی فرائض سرانجام دے رہی ہے۔ کانفرنس کے اختتام پر وزارت دفاع نے جدید ترین پیشرفت، مطالعات، حکمت عملیوں اور پالیسیوں کی وضاحت کرکے ڈیجیٹل جنگ سے متعلق امور پیش کرنے میں اپنے کردار کے لئے تزویراتی شراکت داروں، ماہرین اور مقررین کو اعزازات سے نوازا۔ ترجمہ: ریاض خان ۔ http://www.wam.ae/en/details/1395302801011

WAM/Urdu