متحدہ عرب امارات دہشتگردی کی مالی اعانت روکنے کیلئے پرعزم ہے: القطبی


میلبورن، 7 نومبر ، 2019 (وام) ۔۔ متحدہ عرب امارات نے دہشتگردی کی مالی اعانت سے نمٹنے سے متعلق آسٹریلیا کے شہر میلبورن میں منعقدہ وزارتی کانفرنس میں شرکت کی۔ "No money for Terrorism" کےعنوان سے ہونے والی کانفرنس میں 60 سے زائد ممالک کے علاوہ بین الاقوامی اور علاقائی تنظیموں اور دنیا بھر سے 20 وزراء نے شرکت کی۔ کانفرنس کے دوران متحدہ عرب امارات کے وفد کی سربراہی کرنے والے امور خارجہ اور بین الاقوامی تعاون برائے سلامتی اور عسکری امور کے وزیر ڈاکٹر عبید القطبی نے دہشتگردی سے نمٹنے کے لئے متحدہ عرب امارات کی کوششوں پر روشنی ڈالی۔ انھوں نے کہا کہ انکی حکومت نے دہشتگردی کی مالی اعانت سے نمٹنے کے لئے موجودہ قانونی ڈھانچے کو تقویت بخشی ہے۔ انھوں نے کہا کہ اس سلسلے میں فنانشل ایکشن ٹاسک فورس کا آغاز اور انسداد دہشتگردی کے اقدامات کے لئے 2001 کی سلامتی کونسل کی قرارداد 1373 پر عملدرآمد قابل ذکر ہیں۔ انہوں نے کہا کہ متحدہ عرب امارات کے انسداد منی لانڈرنگ اور مشکوک مقدمات یونٹ نے قومی علاقائی اور بین الاقوامی اداروں کے ساتھ مفاہمت کی 45 یادداشتوں پر دستخط بھی کیے ہیں۔ القطبی نے کہا کہ متحدہ عرب امارات دہشتگردی کی حمایت کے خاتمے کے لئے اپنے بین الاقوامی شراکت داروں کے ساتھ تعاون کو مستحکم کرنے کے لئے پرعزم ہے۔ انکا کہنا تھا کہ بین الاقوامی برادری کے تمام اراکین کے اجتماعی اور مشترکہ اقدام کے ذریعے اس لعنت پر قابو پایا جاسکتا ہے۔ کانفرنس کا افتتاح آسٹریلیا کے وزیر داخلہ پیٹر ڈٹن نے کیا اور انھوں نے دہشتگردی کی مالی اعانت کے تمام ذرائع کو ختم کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔ ترجمہ: ریا ض خان ۔ http://www.wam.ae/en/details/1395302801013

WAM/Urdu