امارات  گروپ نے پہلی ششماہی کیلئے 1.2ارب درہم منافع کا اعلان کردیا


دبئی، 7 نومبر ، 2019 (وام) ۔۔ امارات گروپ نے 2019-20 کے مالی سال کے لئے اپنے نصف سالہ منافع کا اعلان کردیاہے۔ رواں مالی سال کے پہلے چھ ماہ کے دوران گروپ ریونیو 53.3 ارب درہم (14.5 ارب ڈالر) رہا جو گذشتہ سال کی اسی مدت کے دوران 54.4 ارب درہم (14.8 ارب ڈالر) سے 2 فیصد کم ہے۔ آمدنی میں یہ معمولی کمی بنیادی طور پر دبئی انٹرنیشنل ایئر پورٹ کے جنوبی رن وے کی 45دن تک بندش اور یورپ، آسٹریلیا، جنوبی افریقہ، ہندوستان اور پاکستان میں کرنسی کے اتار چڑھاو کے باعث واقع ہوئی ہے۔ گذشتہ سال کی اسی مدت کے مقابلے میں منافع میں 8 فیصد اضافہ ہوا۔ گروپ نے 2019-20کے پہلے چھ ماہ کا خالص منافع 1.2ارب درہم (320 ملین ڈالر) بتایا ہے۔ منافع میں بہتری بنیادی طور پر پچھلے سال کی اسی مدت کے مقابلے میں ایندھن کی قیمتوں میں 9 فیصد کی کمی کی وجہ سے ہوئی تھی تاہم ایندھن کے کم اخراجات سے حاصل ہونے والا منافع کسی حد تک کرنسی میں اتار چڑھاو کی وجہ سے جزوی طور پر متاثر ہوا ۔ 30 ستمبر 2019 کو گروپ کی کیش پوزیشن 23.0 ارب درہم (6.3 ارب ڈالر) رہی جبکہ یہ 31 مارچ 2019 کو 22.2 ارب درہم (6.0 ارب ڈالر) تھی۔ امارات ائیرلائن گروپ کے چیئرمین اور چیف ایگزیکٹو شیخ احمد بن سعید آل مکتوم نے کہا کہ امارات گروپ نے پوری دنیا میں سخت تجارتی حالات اور معاشرتی اور سیاسی غیر یقینی صورتحال کے باوجود رواں سال کی پہلی ششماہی میں مستحکم اور مثبت کارکردگی پیش کی۔ انھوں نے کہا کہ امارات اور دناتا دونوں نے رن وے کی تزئین و آرائش کے باعث اسکی بندش کے کاروبار اور صارفین پر اثرات کو کم سے کم کرنے کے لئے سخت محنت کی۔ انھوں نے کہا کہ ایندھن کی قیمتوں میں کمی خوش آئند مہلت تھی کیونکہ ہم نے گذشتہ سال کے اسی عرصے کے مقابلے میں ایندھن کے بل میں 2.0 ارب درہم کمی ریکارڈ کی تھی تاہم کرنسی میں اتار چڑھاو نے ہمارے منافع سے تقریبا 1.2ارب درہم کا صفایا کردیا۔ انھوں نےکہا کہ عالمی حالات کی پیش گوئی کرنا مشکل ہے لیکن ہم توقع کرتے ہیں کہ اگلے چھ ماہ کے دوران ایئرلائن اور ٹریول انڈسٹری کو دباو کا سامنا کرنا پڑسکتا ہے۔ ایک گروپ کی حیثیت سے ہم اپنے کاروبار کو ترقی دینے پر توجہ مرکوز رکھتے ہیں اور ہم یہ محنت جاری رکھیں گے۔ ہم نئی صلاحیتوں میں سرمایہ کاری جاری رکھتے ہوئے اپنے لوگوں کو بااختیار بنائیں گے تاکہ وہ ہمارے صارفین کے لئے بہتر مصنوعات اور خدمات پیش کرنے کے قابل ہوں۔ امارات ایئر لائن اور گروپ کے چیئرمین نے کہا کہ گروپ کے عملے کی مجموعی اوسط تعداد 105,315ہے۔ یہ تعداد کمپنی کی منصوبہ بندی کی گنجائش اور کاروباری سرگرمیوں کے مطابق ہے اور نئی ٹیکنالوجی اور ورک فلو کے نفاذ کے ذریعے کارکردگی کو بہتر بنانے کے لئے مختلف داخلی پروگراموں کی بھی عکاسی کرتی ہے۔ رواں سال کے پہلے چھ ماہ کے دوران امارات نے 3 ایئربس 380A حاصل کیے جبکہ سال کے اختتام سے قبل 3 مزید نئے طیاروں کی فراہمی طے ہے۔ ترجمہ: ریاض خان ۔ https://wam.ae/en/details/1395302800985

WAM/Urdu