دبئی کی معیشت میں 6 ماہ کے دوران 1ء2 فیصد اضافہ


دبئی ، 24 نومبر ، 2019 (وام) ۔۔ دبئی کی معیشت میں سال 2019 کے پہلے چھ ماہ میں گزشتہ سال کے اسی عرصہ کی نسبت 1ء2 فیصد ترقی ہوئی اور انہی چھ ماہ کے دوران یہ یکساں قیمتوں میں یہ معیشت 2ء208 ارب درہم کی رہی ۔ یہ بات دبئی کے شماریاتی مرکز ، ڈی ایس سی ، کی طرف سے جاری اعداد و شمار میں بتائی گئی – ڈی ایس سی کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر عارف المھیری کا کہنا ہے کہ علاقائی اور عالمی معیشت میں کساد بازاری کے باوجود دبئی کی معیشت میں یہ استحکام اسکی لچک اور اسکے کاروباری ڈھانچے کی وجہ سے پیدا رہا ہے ۔ دبئی کے مضبوط ڈھانچے کی وجہ سے یہاں کے تھوک اور پرچون شعبے نے مجموعی معیشت کو استحکام بخشا ہے اور یہی وجہ ہے علاقائی اور عالمی سطح پر اسکی ری ایکسپورٹ کے کاروبار اور تجارت کو فروغ ملا – المھیری نے بتایا کہ اس چھ ماہ میں تجارتی شعبے نے 3ء3 فیصد سے ترقی کی جبکہ ری ایکسپورٹ 3 فیصد کی شرح سے بڑھ کر 2019 کے پہلے چھ ماہ میں 10 ارب درہم کی ہوئیں ۔ دبئی کی معیشت میں 5ء25 فیصد حصہ رکھنے والے تھوک اور پرچون کاروبار نے 3ء3 فیصد ترقی پائی جبکہ بیرونی تجارت 7ء17 فیصد بڑھ کر 76 ارب درہم کی رہیں ۔ ٹرانسپورٹ اور سٹوریج کے شعبے میں 2ء6 فیصد ترقی ہوئی اور اس شعبے نے معیشت کے دیگر شعبوں کی نسبت واضح ترقی کی – جی ڈی پی میں 1ء5 فیصد حصہ رکھنے والے مہمان نوازی اور ریسٹورنٹ شعبے میں 7ء2 فیصد ترقی رکارڈ کی گئی ، چھ میں کل 84 لاکھ مہمانوں نے دبئی کا رخ کیا جوکہ گزشتہ سال کی نسبت 2ء3 فیصد زیادہ ہے ، دبئی کی جی ڈی پی میں 5ء9 فیصد حصہ رکھنے والے مینوفکچرنگ شعبے میں ترقی کی شرح 3ء0 فیصد رہی ، مجموعی معیشت میں 4ء7 فیصد حصہ رکھنے والے رئیل اسٹیٹ شعبہ میں 1ء2 فیصد ترقی ہوئی – مجموعی معیشت میں 23 فیصد حصہ رکھنے والے کان کنی ، تعمیرات ، پیشہ ورانہ سرگرمیوں ، انتظامی خدمات ، پبلک ایدمنسٹریشن ، تعلیم ، صحت ، آرٹس ، تفریح اور دیگر خدمات و گھریلو سرگرمیوں میں 2 فیصد اضافہ دیکھنے میں آیا ۔ مجموعی معیشت میں 17 فیصد حصہ رکھنے والے زراعت ، بجلی ، گیس ، پانی ، ویسٹ مینجمنٹ ، اطلاعات و معلومات کی سرگرمیوں میں 4ء1 فیصد اضافہ رکارڈ ہوا – ترجمہ ۔ تنویر ملک – http://www.wam.ae/en/details/1395302805754

WAM/Urdu