نیوزی لینڈ اورعرب امارات کی تجارت میں29فیصد اضافہ ہوا: نائب وزیر اعظم


بِنسال عبد القادر سے ابوظہبی ، 28 نومبر ، 2019 (وام) ۔۔ نیوزی لینڈ اور متحدہ عرب امارات کے مابین دو طرفہ تجارت میں گذشتہ ایک سال کے دوران 29 فیصد اضافہ دیکھا گیا ، یہ بات نیوزی لینڈ کے ایک اعلی عہدیدار نے بدھ کے روز امارات نیوز ایجنسی وام کو بتائی۔ متحدہ عرب امارات کے سرکاری دورے کے دوران ابو ظہبی میں نیوزی لینڈ کے سفارت خانے میں خصوصی انٹرویو میں نیوزی لینڈ کے نائب وزیر اعظم اور وزیر برائے امور خارجہ ونسٹن پیٹرز نے کہا کہ "متحدہ عرب امارات مشرق وسطی میں ہمارا سب سے بڑا اور عالمی سطح پر دس واں سب سے بڑا تجارتی شراکت دار ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اکتوبر 2019 کو ختم ہونے والے سال میں دو طرفہ تجارت میں دو ارب باسٹھ کروڑ ڈالر کا اضافہ ہوا جو اکتوبر 2018 کو ختم ہونے والے سال کے دوارب تین کروڑ ڈالر سے 29 فیصد زیادہ ہے۔ عہدیدار نے انکشاف کیا کہ متحدہ عرب امارات کے ساتھ نیوزی لینڈ کی تجارت اس کی خلیجی ممالک کے ساتھ کل تجارت کا تقریبا پچاس فیصدہے۔انہوں نے کہا کہ "متحدہ عرب امارات توانائی کی ضروریات کو پورا کرنے کے لئے ایک اہم شراکت دار ہے۔"

انہوں نے بتایا کہ کھانے پینے کی اشیاء ، دودھ کی مصنوعات ، گوشت ، سبزیاں اور پھل نیوزی لینڈ کی متحدہ عرب امارات کے لئے اہم برآمدات ہیں۔عہدیدار نے بتایا کہ دبئی اور نیوزی لینڈ کے مابین امارات ایئر لائنز کے ذریعے ہفتے میں لگ بھگ 21 براہ راست پروازیں آپریٹ ہورہی ہیں۔ انہوں نے کہا ، "ہم چاہتے ہیں کہ متحدہ عرب امارات کے مزید افراد ہمارے ملک آئیں۔"

پیٹرز نے بدھ کے روز وزیر برائے امور خارجہ و بین الاقوامی تعاون شیخ عبداللہ بن زاید آل نھیان سے ملاقات کی۔ملاقات کے دوران ، شیخ عبداللہ اور پیٹرز نے باہمی دلچسپی کے متعدد امور اور تازہ ترین علاقائی اور بین الاقوامی پیشرفت پر تبادلہ خیال کیا۔انہوں نے متحدہ عرب امارات اور نیوزی لینڈ کے مابین دوطرفہ تعلقات کو بڑھانے کے طریقوں اور قابل تجدید توانائی سمیت تمام شعبوں میں تعاون کو فروغ کے طریقہ کار پر بھی تبادلہ خیال کیا۔ ترجمہ۔تنویر ملک http://wam.ae/en/details/1395302806903

WAM/Urdu