منگل 11 اگست 2020 - 5:54:34 شام

شیخ محمد اور جاپانی وزیراعظم کا دوطرفہ تعلقات کو فروغ دینے پر تبادلہ خیال

  • محمد بن زايد يعقد جلسة مباحثات مع رئيس وزراء اليابان
  • محمد بن زايد يعقد جلسة مباحثات مع رئيس وزراء اليابان
  • محمد بن زايد يعقد جلسة مباحثات مع رئيس وزراء اليابان
  • محمد بن زايد يعقد جلسة مباحثات مع رئيس وزراء اليابان
  • محمد بن زايد يعقد جلسة مباحثات مع رئيس وزراء اليابان
  • محمد بن زايد يعقد جلسة مباحثات مع رئيس وزراء اليابان
ویڈیو تصویر

ابوظبی، 13 جنوری، 2020 (وام) ۔۔ ابوظبی کے ولی عہد اور متحدہ عرب امارات کی مسلح افواج کے ڈپٹی سپریم کمانڈر شیخ محمد بن زاید آل نھیان اور جاپان کے وزیر اعظم شنزو آبے نے دوطرفہ تعلقات کو فروغ دینے پر تبادلہ خیال کیا ہے۔ ابو ظبی کے قصر الوطن میں ہونے والی ملاقات میں شیخ محمد بن زاید نے شینزوآبے کا خیرمقدم کیا اور نئے سال کے موقع پر جاپانی عوام کیلئے نیک خواہشات کا اظہار کیا ۔ انہوں نے ابوظبی ہفتہ استحکام 2020 میں شرکت پر جاپانی وزیراعظم کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ انکی شرکت مقامی، علاقائی اور بین الاقوامی پائیدار ترقی کے حصول میں دوطرفہ تعاون کی عکاس ہے۔ شیخ محمد نے کہا کہ متحدہ عرب امارات اور جاپان کے مابین تعلقات کی جڑیں گہری ہیں اور گذشتہ چند دہائیوں کے دوران تجارت، توانائی، سرمایہ کاری، ٹیکنالوجی، خلاء اور تعلیم کے شعبوں میں ان میں پیش رفت ہوئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ جاپان 1971 میں متحدہ عرب امارات کے ساتھ سفارتی تعلقات قائم کرنے والے پہلے ممالک میں سے ایک تھا۔ انھوں نے کہا کہ شیخ زاید بن سلطان آل نھیان مرحوم کا 1990 میں جاپان کا دورہ دو طرفہ تعلقات میں اہم موڑ تھا۔ شیخ محمد نے کہا کہ جاپانی وزیراعظم کے 2018 میں متحدہ عرب امارات کے دورے سے دوطرفہ تعلقات کو زبردست فروغ ملا۔ انھوں نے کہا کہ اس دورے کےنتیجے میں خاص طور پر ایک جامع اسٹریٹجک شراکت داری کے اقدام کے ذریعے دوطرفہ تعاون کو فروغ دینے کا عزم کیا گیا۔ انھوں نے کہا کہ متحدہ عرب امارات صدر عزت مآب شیخ خلیفہ بن زاید آل نھیان کی قیادت میں اس اسٹریٹجک شراکت کو مزید فروغ دینے کا خواہاں ہے۔ شیخ محمد نے وضاحت کی کہ جو بات متحدہ عرب امارات اور جاپان کے مابین تعلقات کو اہم بنا دیتی ہے وہ یہ ہے کہ وہ دونوں ملک دو سر فہرست علاقائی اور بین الاقوامی ترقیاتی ماڈلز کی نمائندگی کرتے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ دونوں ملکوں میں متمدن اقدار کا ایک ایسا نظام مشترک ہے جو رواداری، بقائے باہمی اور بات چیت پر زور دیتا ہے اور انتہا پسندی، دہشتگردی، منافرت اور نسل پرستی کو مسترد کرتا ہے۔ شیخ محمد نے کہا کہ خلیج عرب اور مشرق وسطی کے خطے نازک اور پیچیدہ حالات سے گزر رہے ہیں اور ان سے دانشمندی سے نمٹنے کی ضرورت ہے تاکہ عالمی امن و سلامتی کیلئے اسٹریٹجک اہمیت کے خطے میں سلامتی اور استحکام کو برقرار رکھا جاسکے۔ انہوں نے کہا کہ عرب ممالک کے اندرونی معاملات میں بعض علاقائی طاقتوں کی مداخلت خطے میں تناؤ، تنازعات اور عدم استحکام کا سب سے خطرناک وجہ ہے۔ شیخ محمد نے خطے میں استحکام اور امن برقرار رکھ کر خلیج عرب سے جاپان اور پوری دنیا میں تیل کی فراہمی اور بین الاقوامی جہاز رانی کے تحفظ کو یقینی بنانے کے لئے متحدہ عرب امارات کے پختہ عزم اور حمایت کا اعادہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ متحدہ عرب امارات کی " سمندری نقل وحمل کے تحفظ اور میری ٹائم کوریڈورز کی حفاظت کو یقینی بنانے کے بین الاقوامی اتحاد" میں شمولیت بین الاقوامی نیویگیشن اور عالمی توانائی کی فراہمی کو لاحق خطرات سے نمٹنے کیلئے بین الاقوامی یا علاقائی کوششوں میں کردار ادا کرنے کی خواہش کا ثبوت ہے۔ انہوں نے خلیج عرب اور مشرق وسطی کے بارے میں جاپان کی حکمت عملی اور متوازن پالیسی کی تعریف کی۔ اپنے بحری جہازوں اور تیل کی فراہمی کے تحفظ کے مقصد سے اپنی بحری افواج کو مشرق وسطی بھیجنے کے بارے میں جاپان کے موقف کا خیرمقدم کرتے ہوئے شیخ محمد نے کہا کہ یہ پوزیشن متحدہ عرب امارات کے موقف کی طرح ہے جس کے تحت متحدہ عرب امارات خطے میں نیوی گیشن کی حفاظت اور آزادی کے لئے ہر اقدام کی حمایت کرتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ خطے میں سلامتی اور استحکام کے ستونوں کے قیام کی حمایت میں متحدہ عرب امارات کی پالیسی کےبھی مطابق ہے۔ جاپان کے وزیر اعظم نے پرتپاک مہمان نوازی اور ابوظبی ہفتہ استحکام 2020 میں شرکت کی دعوت پر شیخ محمد کا شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے مختلف شعبوں میں متحدہ عرب امارات کے ساتھ تعلقات اور اسٹریٹجک شراکت داری کو تقویت دینے کی خواہش کا اظہار کیا۔ جاپانی وزیراعظم نے کہا کہ یہ چوتھا موقع ہے جب وہ متحدہ عرب امارات کا دورہ کررہے ہیں اور شیخ محمد بن زاید آل نھیان سے انکی ملاقات ہورہی ہے۔ انھوں نے کہا کہ متحدہ عرب امارات مشرق وسطی میں پائیدار ترقی، امن اور استحکام کے حصول میں کلیدی کردار ادا کررہا ہے۔ انہوں نے خلیج عرب اور مشرق وسطی کی موجودہ صورتحال میں متحدہ عرب امارات کی پالیسی کی بھی تعریف کی جس کا مقصد کشیدگی کم کرنا اور علاقائی امن برقرار رکھنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ یقینی طور پر متحدہ عرب امارات کی قائدانہ حکمت عملی اور متوازن طرز عمل اور علاقائی استحکام کو برقرار رکھنے میں ملک کے کردار کی عکاسی کرتا ہے۔ جاپانی وزیر اعظم نے خطے کی صورتحال پر جاپان کی تشویش کا اظہار کیا اور علاقائی تناؤ کم کرنے کے لئے مسلسل کوششوں اور بحری جہازوں کی حفاظت یقینی بنانے کے لئے جاپان کی سیلف ڈیفنس فورس بھیجنے کے فیصلے کا حوالہ دیا۔ انہوں مزید کہا کہ جاپان متحدہ عرب امارات کے ساتھ تعاون کو مستحکم کرنے میں دلچسپی رکھتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ 2020 متحدہ عرب امارات اور جاپان کے لئے تاریخی سال ثابت ہونے والا ہے کیونکہ متحدہ عرب امارات ​​ایکسپو 2020 دبئی کی میزبانی کرے گا جبکہ جاپان اولمپک گیمز ٹوکیو 2020 کی میزبانی کرے گا۔ شینزو آبے نے جاپان کے شہنشاہ کی طرف سے صدر عزت مآب شیخ خلیفہ بن زاید آل نھیان کو نیک خواہشات کا پیغام پہنچایا۔ انھوں نے ابوظبی ایگزیکٹو کونسل کے نائب چیئرمین شیخ ھزاع بن زاید آل نھیان کی طرف سے جاپان کے نئے شہنشاہ کی افتتاحی تقریب میں شرکت کو سراہا۔ انھوں نے جاپانی کمپنیوں کو تیل کی تلاش کیلئے مراعات دینے اور جاپان کو تیل کی بلاتعطل فراہمی کو بھی سراہا۔ ترجمہ: ریاض خان ۔ http://wam.ae/en/details/1395302815930

WAM/Urdu