ملائیشیا کے اسلامی بینک کا دبئی میں برانچ کا افتتاح

  • مكتوم بن محمد يشهد افتتاح أول فرع لمصرف
  • مكتوم بن محمد يشهد افتتاح أول فرع لمصرف
  • مكتوم بن محمد يشهد افتتاح أول فرع لمصرف

دبئی، 10 فروری، 2020 (وام) ۔۔ دبئی کے نائب حکمران اور دبئی انٹرنیشنل فنانشل سنٹر، DIFC کے صدر شیخ مکتوم بن محمد بن راشد آل مکتوم نے ملائیشیا اور آسیان خطے کے سب سے بڑے اسلامی بینک مے بینک اسلامی برہاد (مے بینک اسلامی) کی پہلی بیرون ملک برانچ کی افتتاحی تقریب میں شرکت کی۔ مے بینک اسلامی ملائیشیا کے سب سے بڑے قرض دینے والے ملایئن بینکنگ برہاد (مے بینک) کی شریعت کے مطابق ڈویژن ہے اور یہ بلومبرگ کے گلوبل سکوک لیگ ٹیبل کے ایک اہم منتظم میں سے ایک ہے۔ 30 ستمبر 2019 تک مے بینک اسلامی کے مجموعی اثاثے 57.35 ارب ڈالر سے زیادہ تھے۔ شیخ مکتوم بن محمد نے کہاکہ اسلامک فنانس دبئی کی معاشی حکمت عملی کا ایک اہم عنصر ہے اور یہ نائب صدر، وزیر اعظم اور دبئی کے حکمران شیخ محمد بن راشد آل مکتوم کے وژن کے تحت اگلے 50 سالوں میں ترقی کے ایک نئے مرحلے کی بنیاد پر ہے۔ انھوں نے کہا کہ دبئی میں ملائیشیا کے سب سے بڑے اسلامی بینک کے پہلے بیرون ملک دفتر کا قیام اسلامی معیشت کے مرکز میں دبئی کے اہم کردار اور اس کے مضبوط فوائد کا اعتراف ہے۔ انھوں نے کہا کہ آنے والی دہائی کے دوران دبئی کا مقصد تیزی سے بڑھتی ہوئی اسلامی معیشت کے شعبے کے دارالحکومت کے طور پر اپنے کردار کو مزید مستحکم کرنا ہے جو اس وقت دنیا کی آبادی کے ایک چوتھائی حصے کی ضروریات کو پورا کرتا ہے۔ انھوں نے کہا کہ اس شعبے کی تعمیر کے ذریعے ہم نئے معاشی مواقع پیدا کرنے اور شراکتیں قائم کرنے کے منتظر ہیں۔ مے بینک اسلامی کو جولائی 2019 میں دبئی فنانشل سروسز اتھارٹی کی جانب سے مکمل اسلامی بینکاری لائسنس دیا گیا تھا تاکہ ڈی آئی ایف سی میں برانچ کھولی جائے اور یہ غیر ملکی موجودگی کا ملائیشیا کا پہلا اسلامی بینک بن جائے۔ گروپ سی ای او مے بنک گروپ اسلامک بنکنگ اور مے بنک اسلامی کے سی ای او داتو محمد رفیق نے کہا کہ انھیں دبئی میں مے بینک کی سرگرمیوں کے آغاز کا اعلان کرتے ہوئے بہت خوشی محسوس ہورہی ہے۔ انھوں نے کہا کہ ڈی آئی ایف سی میں ہماری برانچ کا افتتاح ہمارے لئے واقعی اہم ہے کیونکہ یہ نہ صرف ہماری پہلی بیرون شاخ ہے بلکہ اس سے ملائیشیا کے پہلے اسلامی بینک کی بیرون ملک موجودگی ممکن ہوئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ مے بینک گروپ کی خواہش ہے کہ مے بینک اسلامی اسلامی مالیات میں عالمی رہنما بن جائے اور دبئی کے اہم اسلامی مالیاتی مرکز، ڈی آئی ایف سی بنک کی شاخ کا افتتاح بینک کے لئے ایک بڑی کامیابی ہے۔ ڈی آئی ایف سی کی گورنر عیسیٰ کاظم نے کہا کہ ڈی آئی ایف سی مشرق وسطی اور افریقہ کے خطے میں 600 ملین سے زیادہ مسلمانوں کو شریعت کے مطابق مصنوعات اور خدمات پیش کرتا ہے۔ مے بینک اسلامی کے اضافے سے شریعت کے مطابق خدمات کے ساتھ مالیاتی اداروں کی تیز رفتار نمو کو تقویت ملتی ہے اور ڈی آئی ایف سی کے زیر انتظام اسلامی اثاثوں میں تیزی سے اضافے کی تکمیل ہوتی ہے۔ مے بینک اسلامی ان 2,300 سے زیادہ فعال رجسٹرڈ کمپنیوں میں شامل ہوگیا ہے جنہوں نے تیز رفتار ترقی پذیر مشرق وسطیٰ اور شمالی افریقہ کے خطے تک آسان رسائی حاصل کرنے کے لئے DIFC کو اپنی پسند کی جگہ کے طور پر منتخب کیا ہے۔ نئی برانچ کی سربراہی کنٹری منیجر نک جوہارس نیک احمد کررہے ہیں جو مالیاتی خدمات کی صنعت میں 20 سال سے زیادہ کا تجربہ رکھتے ہیں۔ ان کے پاس وسیع تجربہ ہے اور وہ ملائشیا، کویت، بحرین اور سعودی عرب میں خاص طور پر اسلامی کارپوریٹ قرضوں کی مالی معاونت میں کام کر چکے ہیں۔ ترجمہ: ریاض خان ۔ https://www.wam.ae/en/details/1395302822874

WAM/Urdu