ADFDاورDFC کے درمیان علم ،مہارت کے تبادلے کیلئے مفاہمت کی یادداشت پر دستخط

  • adfd partners with us' dfc to bolster development collaboration 1
  • adfd partners with us' dfc to bolster development collaboration 2

ابوظبی، 11 فروری، 2020 (وام) ۔۔ ابو ظبی فنڈ برائے ترقی، اے ڈی ایف ڈی نے امریکہ کی بین الاقوامی ترقیاتی فنانس کارپوریشن، ڈی ایف سی کے ساتھ مفاہمت کی یادداشت پر دستخط کیے ہیں۔ مفاہمت نامہ کے مطابق باہمی تعاون کے شعبوں میں دونوں جماعتوں کے مابین علم اور مہارت کا تبادلہ بالخصوص بین الاقوامی سطح پر نجی شعبے کی سرمایہ کاری کو مالی اعانت فراہم کرنے کے شعبے میں ایک خاص توجہ کے ساتھ ترقی پذیر ممالک کے معاشروں پر تبدیلی کے اثرات مرتب کرنے والے منصوبوں پر خصوصی توجہ دی جائے گی۔ معاہدے کے تحت، اے ڈی ایف ڈی ڈی ایف سی کے دیرینہ تجربے سے فائدہ اٹھائے گا اور نجی شعبے کی مالی اعانت کے ایک مستحکم پروگرام کے قیام میں رہنمائی حاصل کرے گا جس میں پالیسیاں، دستور، طریقہ کار اور ڈھانچہ شامل ہے۔ ابو ظبی میں فنڈ کے ہیڈ کوارٹر میں اے ڈی ایف ڈی کے ڈائریکٹر جنرل محمد سیف السویدی اور ڈی ایف سی کے چیف ایگزیکٹو آفیسر ایڈم بوہلر نے مفاہمت کی یادداشت پر دستخط کیے۔ دستخطوں کی تقریب میں متحدہ عرب امارات میں امریکہ کے سفیر جان رکولٹا جونیئر، ڈپٹی ڈائریکٹر جنرل اے ڈی ایف ڈی خلیفہ القبیسی اور دونوں اطراف کے متعدد سینئر نمائندے شریک تھے ۔ اے ڈی ایف ڈی کے ڈائریکٹر جنرل محمد سیف السویدی نے کہا کہ ہم اس مفاہمت نامے پر دستخط کرنے پر انتہائی خوشی ہے کیونکہ یہ عالمی سطح پر پائیدار ترقی کو متاثر کرنے والے بڑے چیلنجوں سے نمٹنے کے لئے بین الاقوامی تنظیموں کے ساتھ مل کر کام کرنے کی اے ڈی ایف ڈی کی خواہش کو ظاہر کرتا ہے۔ انھوں نے کہا کہ یہ معاہدہ متحدہ عرب امارات اور امریکہ کے مابین دیرینہ اسٹریٹجک شراکت داری کو تقویت دینے کے ساتھ ہمیں دنیا بھر میں اپنے منصوبوں کے سماجی و معاشی اثرات کو زیادہ سے زیادہ کرنے کے لئے نجی شعبے کی سرمایہ کاری کو متحرک کرنے میں مدد دے گا۔ ڈی ایف سی کے چیف ایگزیکٹو آفیسر ایڈم بوہلر نے کہا کہ سرمایہ کاری اور ترقی کی ضرورت مشرق وسطی اور خطے کے لئے زیادہ خوشحال، مستحکم اور محفوظ مستقبل کے مابین کھڑی چیلنجوں میں سے ایک ہے۔ انھوں نے کہا کہ ڈی ایف سی اور اے ڈی ایف ڈی کے مابین اس باہمی اشتراک کے ذریعے ہم ترقی کے نئے مواقع پیدا کرسکتے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ اس اسٹریٹجک شراکت داری کے ذریعے اے ڈی ایف ڈی اور ڈی ایف سی مل کر کام کریں گے تاکہ ترقیاتی تعاون کو مستحکم کیا جاسکے، معلومات کا تبادلہ ہو، ترقیاتی منصوبوں کے امکانات کی نشاندہی کی جاسکے اور پروجیکٹ سے متعلقہ تعاون کے معاہدوں کو حتمی شکل دی جاسکے۔ انھوں نے کہا کہ ایسا کرتے ہوئے وہ ترقی پذیر ممالک کو درپیش چیلنجوں سے نمٹنے کے لئے ایک مؤثر شراکت کو یقینی بنانے اور بین الاقوامی ترقی کے میدان میں ابھرتے ہوئے چیلنجوں سے نمٹنے کے لئے ان کی صلاحیت کو مزید بڑھانے کے لئے تیار ہیں۔ امریکہ کی بین الاقوامی ترقیاتی فنانس کارپوریشن، ڈی ایف سی سرمایہ کاری کے منصوبوں کے لئے مالی اعانت اور سیاسی رسک انشورنس کی پیش کش کے ذریعے کم ترقی یافتہ ممالک اور علاقوں کی معاشی اور معاشرتی ترقی میں امریکی نجی سرمایہ اور مہارت کی سرمایہ کاری کو متحرک اور سہولیات فراہم کرنا چاہتی ہے۔ 1971 میں اپنے قیام کے بعد سے اے ڈی ایف ڈی نے 94 ممالک میں ترقیاتی منصوبوں کے لئے 102 ارب درہم کے فنڈز فراہم کیے ہیں۔ یہ فنڈز آسان قرضوں، سرکاری گرانٹ اور سرمایہ کاری کے ذریعے فراہم کیے گئے ہیں۔ یہ فنڈز ترقی پذیر ممالک میں معاشی و اقتصادی نمو اور اقوام متحدہ کے پائیدار ترقیاتی اہداف کے حصول میں مددگار ہیں۔ ترجمہ: ریاض خان ۔ http://wam.ae/en/details/1395302823061

WAM/Urdu