IRENAاور UN-Habitatکے درمیان پائیدار توانائی میں تعاون کا معاہدہ

  • موئل الأمم المتحدة و"آيرينا" يتفقان على نشر التحول للطاقة المتجددة
  • موئل الأمم المتحدة و"آيرينا" يتفقان على نشر التحول للطاقة المتجددة

ابوظبی، 12 فروری، 2020 (وام) ۔۔ بین الاقوامی قابل تجدید توانائی ایجنسی، IRENA نے شہری ترقی کے تناظر میں پائیدار توانائی کے شعبے میں تعاون کے لئے اقوام متحدہ کے انسانی آبادکاری پروگرام، UN-Habitatکے ساتھ مفاہمت کی یادداشت پر دستخط کیےہیں۔ IRENA کی سٹڈیز کے مطابق عالمی توانائی کی 65 فیصد طلب کے ذمے دار شہر ذمہ دار ہیں جبکہ موسمیاتی تبدیلی کے بارے میں بین الحکومتی پینل کے ڈیٹا سے پتہ چلتا ہے کہ توانائی سے متعلق کاربن ڈائی آکسائیڈ کے اخراج میں71سے 76 فیصد شہر ذمہ دار ہیں۔ مفاہمت کی یادداشت پر ابو ظبی میں ورلڈ اربن فورم، WUF10کے دسویں سیشن کے دوران IRENA کے ڈائریکٹر جنرل فرانسسکو لا کیمرا اور UN-Habitatکے ڈپٹی ایگزیکٹو ڈائریکٹر وکٹر کیسوب نے دستخط کئے۔ IRENA کے ڈائریکٹر جنرل فرانسسکو لا کیمرانے کہا کہ شہر جدید معاشی نمو کے انجن ہیں جو خوشحالی اور مواقع کی حمایت کرتے ہیں تاہم یہ توانائی کی طلب اور کاربن کے اخراج کا ایک ذریعہ بھی ہیں۔ انھوں نے کہا کہ آب و ہوا اور پائیدار ترقیاتی اہداف کے حصول میں میونسپل حکومتوں کو پالیسی فریم ورک کو مستحکم کرنے کا موقع ہے تاکہ شہروں کو قابل تجدید توانائی کے استعمال پر منتقل کیا جاسکے۔انھوں نے کہا کہ شہروں نے عالمی توانائی کی تبدیلی کے مقاصد کے حصول میں نمایاں کردار ادا کیا ہے اور یہ شراکت اس عمل کو تیز کرنے میں معاون ثابت ہوگی۔ IRENA اور UN UN-Habitat کئی سال سے مختلف مواقع میں مہارتوں کے تبادلہ میں ایک دوسرے سے تعاون کررہے ہیں۔ UN-Habitatکے ڈپٹی ایکزیکٹو ڈائریکٹر وکٹر کیسوب نے کہاکہ اس مفاہمت نامہ پر دستخط اقوام متحدہ کی اصلاحات اور اشتراک عمل کو آگے بڑھانے کے اقدامات میں سے ایک ہے۔ انھوں نے کہا کہ وہ زیادہ مستقبل میں پائیدار توانائی کے لئے IRENA کے ساتھ اپنی شراکت کو مستحکم کرنے پر خوش ہیں۔ ترجمہ: ریاض خان ۔ http://www.wam.ae/en/details/1395302823521

WAM/Urdu