پیر 18 جنوری 2021 - 2:11:33 صبح

میکسیکو اماراتی قیادت کے خوشی کے ایجنڈے میں خصوصی دلچسپی رکھتاہے

  • 20
  • wam-0
ویڈیو تصویر

ابوظبی، یکم مارچ، 2020 (وام) ۔۔ میکسیکو کے کثیرالجہتی امور اور انسانی حقوق کی نائب وزیر مارتھا ڈیلگادو نے کہا ہے کہ میکسیکو اور متحدہ عرب امارات کے درمیان بہت سی قدریں مشترک ہیں اور انکا ملک متحدہ عرب امارات کے خوشی کے ایجنڈے میں خصوصی دلچسپی رکھتا ہے۔ اپنے حالیہ دورے کے دوران امارات نیوز ایجنسی، وام کو ایک انٹرویو میں انھوں نے کہا کہ متحدہ عرب امارات خوشی کے حصول کے بارے میں جو کچھ ہورہا ہے وہ اس سے بہت کچھ سیکھ رہے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ وہ خوشی کے اس ایجنڈے پر متحدہ عرب امارات کے رہنماؤں کی پیروی کرنے میں دلچسپی رکھتی ہیں۔ عالمی سطح پر خوشی کا اتحاد دبئی میں ورلڈ گورنمنٹ سمٹ 2018 کے دوران متحدہ عرب امارات کے نائب صدر، وزیر اعظم اور دبئی کے حکمران شیخ محمد بن راشد آل مکتوم اور دبئی کے ولی عہد شیخ حمدان بن محمد بن راشد آل مکتوم کی موجودگی میں شروع کیا گیا تھا ۔ اس اتحاد میں متحدہ عرب امارات ، پرتگال ، کوسٹا ریکا ، میکسیکو ، قازقستان اور سلووینیا سمیت چھ ممالک کے وزراء شامل ہیں۔ شیخ محمد نے کہا کہ دنیا کو ایسے نئے اتحادوں کی ضرورت ہے جو لوگوں کی فلاح و بہبود اور خوشی کے لئے کام کرتے ہوں۔ "عالمی خوشی کا اتحاد اس پیغام کی عکاسی کرتا ہے جہاں متحدہ عرب امارات کی خواہشات ہر ایک کے بہتر مستقبل کیلئے دنیا بھر کے مختلف ممالک کے عزائم سے ملتی ہیں۔ شیخ محمد نے اس موقع پر کہا تھا کہ وقت آگیا ہے کہ حکومتیں لوگوں کی خوشی کے حصول اور ان کے معیار زندگی کو بہتر بنانے کے لئے نئی روش اور طریقہ کار کے ساتھ آئیں۔ عالمی سطح پر میکسیکو اورمتحدہ عرب امارات کے تعاون کے بارے میں بات کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ اقوام متحدہ کی سطح پر میکسیکو اور متحدہ عرب امارات متعدد امور پر یکساں سوچ رکھتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم مختلف بین الاقوامی تنظیموں میں شراکت دار ہیں جہاں ہم مل کر متعدد بین الاقوامی ایجنڈوں کا تجزیہ کرتے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ میکسیکو متحدہ عرب امارات کے ساتھ تجارتی تبادلے کو مستحکم کرنے کا خواہاں ہے اور انہوں نے اپنے دورے کے دوران متحدہ عرب امارات کے متعلقہ حکام سے اس سلسلے میں ملاقاتیں کرکے اس حوالے سے تبادلہ خیال کیا ہے۔ ڈیلگاڈو کے پاس پائیدار ترقی اور شہریت کو مستحکم کرنے کے لئے وقف سول سوسائٹی کی مختلف تنظیموں میں پچیس سال سے زیادہ کا تجربہ ہے۔انہوں نے کہا کہ نوجوان ماحولیاتی وجوہات اور پائیدار ترقی کے لئے زیادہ پرعزم ہیں۔ انکا کہنا تھا کہ اس سے امید ملتی ہے کیونکہ مستقبل ان نوجوانوں کے ہاتھوں میں محفوظ ہے۔ اقوام متحدہ نے 1992 میں میکسیکو سٹی کو دنیا کا سب سے آلودہ شہر قرار دیا تھا۔ تاہم IQAir Visualکی 2019 ورلڈ ایئر کوالٹی رپورٹ کے مطابق میکسیکو سٹی دنیا کے سب سے آلودہ شہروں میں 856 ویں نمبر پر ہے۔ ترجمہ: ریاض خان ۔ http://wam.ae/en/details/1395302827829

WAM/Urdu