ابوظبی میں پہلے کمرشل مائع سٹوریج ٹرمینل کی تعمیر کا سٹریٹجک معاہدہ


ابوظبی، 23 مارچ، 2020 (وام) ۔۔ ابوظبی پورٹس نے سعودی عرب میں قائم عرب کیمیکل ٹرمینلز کے ساتھ ایک اسٹریٹجک معاہدہ کیا ہے جس کے تحت گہرے پانی کی بندرگاہ خلیفہ پورٹ پر متحدہ عرب امارات کا پہلا گرین فیلڈ کمرشل مائع اسٹوریج ٹرمینل قائم کیا جائے گا۔ اس منصوبے سے مائع مصنوعات اور گیسوں کو ذخیرہ کرنے میں ابوظبی پورٹس کی صلاحیت مزید بہتر ہوگی اور خطے میں مائع اسٹوریج کے خواہاں موجودہ اور نئے صارفین کو فائدہ ہو گا۔ متحدہ عرب امارات اور خاص طور پر ابو ظبی میں عرب کیمیکل ٹرمینلز کے ذریعے تیار کیے جانے والے اپنی نوعیت کے اس پہلے ٹرمینل کے اسٹریٹجک محل وقوع اور اعلی درجے کی سہولیات تیل اور گیس کی دنیا کی سب سے بڑی فرموں اور سرمایہ کاروں کو اپنی طرف راغب کریں گی۔ نئے اور موجودہ صارفین خلیفہ پورٹ کے بہتر سمندری، لاجسٹک اور صنعتی صلاحیتوں کے ساتھ اس کے اسٹریٹجک محل وقوع سے بھرپور استفادہ کرسکتے ہیں ۔ معاہدے کے تحت بلک مائع ٹرمینل 16 میٹر گہرے پانی سے متصل 50,000مربع میٹر اراضی پر تیار کیا جائے گا۔ معاہدے کے تحت ضرورت پڑنے پر منصوبے کیلئے مزید ڈیڑھ لاکھ مربع میٹر اراضی فراہم کی جاسکتی ہے۔ ابو ظبی پورٹس کے گروپ سی ای او کیپٹن محمد جمعہ الشمیسی اور عرب کیمیکل ٹرمینلز لمیٹڈ کے منیجنگ ڈائریکٹر اور رضا انوسٹمنٹ کمپنی کے ڈپٹی منیجنگ ڈائریکٹر راقان علی رضا نے دستخط کیے۔ معاہدے کے مطابق اس منصوبے کو دو مراحل میں مکمل کیا جائے گا۔ پہلا مرحلہ 2022 کی دوسری ششماہی کے دوران مکمل ہونے کی توقع ہے جس میں 1250 اور 3000 ٹن سائز کے 44 اسٹوریج ٹینک تعمیر کئے جائیں گے۔ ٹرمینل کا دوسرا مرحلہ آس پاس کے علاقے میں توسیع کے بعد شروع ہوگا اور یہ صنعتی ذخیرہ کرنے کے بڑے بڑے ٹینکوں کی تعمیر پر مشتمل ہوگا۔ ابو ظبی پورٹس کے گروپ سی ای او کیپٹن محمد جمعہ الشمیسی نے کہا کہ ابوظبی پورٹس کی تنوع کی حکمت عملی کا بنیادی مقصد تمام سائز اور صنعتوں کے صارفین کے لئے ٹیکنالوجی سے مالا مال لاجسٹک حل فراہم کرنا ہے۔ انھوں نے کہا کہ عرب کیمیکل ٹرمینلز کے ساتھ کام پر انھیں خوشی ہے کیونکہ اب وہ مارکیٹ میں دستیاب جدید ترین ٹیکنالوجیز کے ذریعے مربوط لاجسٹکس کا ایک جامع پیکج پیش کرنے کے قابل ہے۔ عرب کیمیکل ٹرمینلز لمیٹڈ کے منیجنگ ڈائریکٹر راقان علی رضا نے کہا کہ و ہ ابوظبی میں اپنے پہلے تجارتی ٹینک فارم کی تعمیر کیلئے بہت پرجوش ہیں ۔ انھوں نے کہا کہ وہ اس سے پہلے وہ سعودی عرب میں اس قسم کی سہولت قائم کرچکے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ ابوظبی، الرویس اور دبئی کی صنعتوں کے مابین واقع نیا مائع ٹرمینل نہ صرف اس کے اسٹریٹجک محل وقوع کے نتیجے میں ترقی کرے گا بلکہ خلیفہ پورٹ کے کثیر ماڈل رابطوں کے ذریعے متحدہ عرب امارات کے سمندروں، وسیع سڑکوں اور مستقبل کے خلیج تعاون کونسل کے ریلوے نیٹ ورک تک رسائی فراہم کرے گا۔ عرب کیمیکل ٹرمینلز بلک مائع ٹرمینل کی تعمیر کے علاوہ خلیفہ پورٹ اور اس کے آس پاس اپنی سرگرمیوں کو وسعت دینے کے لئے مختلف مواقع کی تلاش کر رہا ہے۔ اس توسیع میں بندرگاہ کے صارفین کے لئے فیول بنکر خدمات، ڈرمنگ اور آئی ایس او فلنگ کی خدمات شامل ہیں۔ ترجمہ: ریاض خان ۔ http://www.wam.ae/en/details/1395302832462

WAM/Urdu