جمعرات 06 اگست 2020 - 5:53:37 صبح

مذہب کو یرغمال بنائے جانے کے باعث متحدہ عرب امارات رواداری کا بڑا حامی ہے:سفیر العتيبة


بنسل عبدالقادر سے ابوظہبی ، 21 جولائی ، 2020 (وام) ۔۔ ایک سینئراماراتی سفارتکار نے کہا ہے کہ مذہب کو یرغمال بنانے اور اس کو سیاست زدہ کرنے کے احساس کی بدولت متحدہ عرب امارات گزشتہ کچھ سالوں کے دوران رواداری کی اقدار کے حوالے سے بہت زیادہ آواز اٹھا رہا ہے۔امریکہ میں متحدہ عرب امارات کے سفیر يوسف العتيبة نے کہا کہ ہم ہمیشہ سے رواداری اور اس سے متعلق اقدار کو فروغ دیتے آئے ہیں لیکن پچھلے دو سالوں میں اس حوالے سے زیادہ آوازاٹھائی گئی ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے ابوظہبی کے ولی عہد اور متحدہ عرب امارات کی مسلح افواج کے نائب سپریم کمانڈر محمد بن زاید اال نھیان کی ڈھائی کروڑ ڈالر کے امدادی تحفہ کے ساتھ خصوصی اولمپک کے زیر اہتمام خصوصی اولمپک یونی فائیڈ چیمپیئن اسکول،یو سی ایس پر تبادلہ خیال کے لئے ہونے والے ویبنر سے کیا۔ العتيبة نے کہا کہ متحدہ عرب امارات کی جانب سے اپنے نقطہ نظر کو تبدیل کرنے اور رواداری کے بارے میں مزید آواز اٹھانے کی ایک وجہ ہے۔انہوں نے وضاحت کی کہ پوپ کی میزبانی کرنا ، اسپیشل اولمپکس کا انعقاد ، ابراہیمی ہاؤس بنانا ... یہ سب اس وجہ سے کہ ہمیں لگتا ہے کہ مذہب کو ہائی جیک کیا گیا ہے اور اس پر سیاست کی گئی ۔ انہوں نے کہا کہ "مجھے لگتا ہے کہ ہمارا مذہب ، کم از کم جس طرح میں اپنے مذہب کو سمجھتا ہوں ، وہ کبھی بھی سیاست کے حوالے سے نہیں تھا ... کبھی بھی انتہا پسندی کے بارے میں نہیں تھا ... کبھی بھی تشدد کے بارے میں نہیں تھا۔ سینئر سفارت کار نے کہا کہ "بہت سارے لوگ اب ہماری طرف دیکھتے ہیں اور ہماری دنیا کے حصے کو دیکھتے ہیں اور سمجھتے ہیں کہ یہ پورا خطہ متشدد ہے اور یہاں کا مذہب بنیاد پرست ہے ، جو ایسا نہیں ہے۔ ہم پوری دنیا کو یہ پیش کرنے کی کوشش کر رہے ہیں کہ مذہب بالکل ایسا کچھ بھی نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ مختلف لوگ مختلف طریقوں سے مذہب پر عمل پیرا ہیں ، لیکن میں سمجھتا ہوں کہ اس پیغام کو مشرق وسطی سے باقی دنیا تک پہنچانا ضروری ہے۔ انہوں نے بتایا کہ متحدہ عرب امارات نے محسوس کیا ہے کہ اسپیشل اولمپکس میں بھی کچھ اقدار مشترک ہیں۔ خصوصی اولمپکس یونیفائیڈ چیمپیئن اسکول ، یو سی ایس کے لئے متحدہ عرب امارات کا 25 ملین امریکی ڈالر کا تحفہ ، ملک کی شمولیت ، احترام ، قبولیت اور رواداری کی اقدار کی نمائندگی کرتا ہے۔ شیخ محمد بن زاید کی حمایت کے ذریعہ پیر کے روز اسپیشل اولمپکس کے ذریعہ یو سی ایس کی عالمی توسیع کا اعلان معذور افراد کی شمولیت کا سب سے بڑا اقدام ہے۔ امریکہ میں یو سی ایس کی ایک دہائی سے زیادہ کامیابی اور دنیا کے پچاس سے زیادہ دوسرے ممالک میں بڑھتے ہوئے اثرات کی بنیاد پر شیخ محمد بن زاید نے متحدہ عرب امارات کے عوام کی جانب سے اس اقدام کو آگے بڑھانے کے لئے 25 ملین ڈالرعطیہ کا وعدہ کیا ہے خصوصی اولمپکس ارجنٹائن ، مصر ، بھارت ، پاکستان ، رومانیہ اور روانڈا میں یو سی ایس کی ترقی کی راہنمائی کرے گا ۔ ترجمہ۔تنویر ملک http://www.wam.ae/en/details/1395302856743

WAM/Urdu