جمعرات 06 اگست 2020 - 5:44:36 صبح

بیہ کاخطے میں لینڈ فل میں پہلا شمسی توانائی پلانٹ قائم کرنے کا اعلان


شارجہ، 27 جولائی ،2020 (وام) ۔۔ مشرق وسطی میں پائیداری کے حوالے سے ممتاز ادارے بیہ نے شارجہ کے علاقے الشجاء میں 47 ایکڑ لینڈ فل کے رقبے کو جدید ترین شمسی توانائی کی سہولت میں تبدیل کرنے کا اعلان کیا ہے ۔ خطے میں یہ اپنی نوعیت کا پہلا منصوبہ ہے جس میں سالانہ 42 میگا واٹ سے زیادہ توانائی پیدا ہوگی۔ ماحولیاتی استحکام اور ایک سرکلر معیشت چلاتے ہوئے بیہ نے موثر حکمت عملی کے ذریعے فضلہ کے انتظام کے لئے ایک مربوط طریقہ اختیار کیا ہے۔ فضلہ جمع کرکے بیہ کے ویسٹ مینجمنٹ کمپلیکس میں منتقل کرنے کے بعد ری سائیکلنگ کی جدید سہولیات قیمتی وسائل اور قابل تجدید اشیاء تلاش کریں گی ۔ بیہ نے شارجہ کو لینڈ فل کے نرخ سے 76 فیصد تک فضلہ کو قابل تجدید ذرائع میں تبدیل کرنے میں مدد فراہم کی ہے۔ بیہ مصدر کے ساتھ مشترکہ منصوبے کے ذریعے امارت کے فضلے کو 2021 میں شارجہ ویسٹ ٹو انرجی سہولت کے ذریعے 100 فیصد تک فضلے کو قابل تجدید توانائی میں تبدیل کرنے کے قابل ہوجائے گی۔ شارجہ ویسٹ ٹو انرجی سہولت میں تین لاکھ ٹن ناقابل تجدید فضلہ کی سالانہ پروسیسنگ کے ذریعے 300 میگاواٹ بجلی پیدا کرنے کی گنجائش ہے۔ نئے منصوبے کے بارے میں بیہ کے چیئرمین سلیم الاویس نے کہا کہ یہ نیا لینڈ فل شمسی منصوبہ بیہ کے لئے ایک قابل ذکر تاریخی کارنامہ ہے کیونکہ ہم فضلہ کے انتظام اور صاف توانائی کی پیداوار میں اپنا کردار ادا کررہے ہیں۔ پہلے مرحلے میں لینڈ فل ایریا کو 24 میگاواٹ کی متوقع پیداوار کے ساتھ 270,565 مربع میٹر کو شمسی علاقے میں تبدیل کیا جائے گا۔ دوسرا مرحلے میں مزید 200,099 مربع میٹر کو شمسی علاقے میں تبدیل ہوجائے گا جس سے 16 میگا واٹ بجلی پیدا ہوگی۔ بیہ کے گروپ سی ای او خالد الحوریمل نے کہا کہ بیہ کا مقصد ماحولیاتی استحکام کو حقیقت کی شکل دینا ہے۔ انھوں نے کہا کہ طویل المیعاد شمسی انفراسٹرکچر کے لئے الشجاء لینڈ کو بھرنے کے لئے اس سرمایہ کاری سے شارجہ کو قابل تجدید توانائی کے اہداف حاصل کرنے میں مدد ملے گی اور ایندھن پر ہمارا انحصار کم ہوگا۔ انھوں نے کہا کہ ہمارا نیا شمسی پلانٹ شارجہ کی توانائی کی ضروریات پوری کرنے میں مدد فراہم کرے گا ۔ ترجمہ: ریاض خان ۔ http://www.wam.ae/en/details/1395302858453

WAM/Urdu