ہفتہ 26 ستمبر 2020 - 7:44:04 شام

متحدہ عرب امارات کا دنیا بھر کے بچوں کے حقوق کے تحفظ کے عزم کا اعادہ


نیویارک ، 13 ستمبر ، 2020 (وام) ۔۔ متحدہ عرب امارات نے دنیا بھر کے بچوں خصوصا تنازعات کا شکار علاقوں میں اسکولوں کی حفاظت اور سنگین خلاف ورزیوں کی روک تھام کے ساتھ ساتھ بچوں کے تعلیم کے حق کے تحفظ کے لئے اپنے عزم کا اعادہ کیا ہے۔ اقوام متحدہ سلامتی کونسل میں بچوں اور مسلح تصادم سے متعلق کھلی بحث کے دوران بیان میں متحدہ عرب امارات نے اسکولوں کے خلاف حملوں کو بچوں کے حقوق کی سنگین خلاف ورزی قرار دیتے ہوئے بچوں پر مسلح تصادم کے اثرات کو کم کرنے کے لئے سلامتی کونسل کی قراردادوں پر عمل درآمد کے حوالے سے اپنے عزم کی تجدید کی۔ متحدہ عرب امارات نے کہا کہ کووڈ 19 نے دنیا بھر میں اسکولوں اور اساتذہ کے اہم کردار کو اجاگر کیا ہے ، لیکن تنازعات کی صورتحال سے دوچار بچوں کے لئے یہ اور بھی اہم ہے شہری اداروں کی حیثیت سے اسکولوں کو بین الاقوامی انسانی قانون کے تحت تحفظ فراہم کیا جانا چاہئے۔ متحدہ عرب امارات کا موقف تھا کہ پوری انسانی برادری کی ترقی کے اہم عنصر کے طور پر تعلیم کا تحفظ متحدہ عرب امارات کی اولین ترجیح ہے۔ اس حوالے سے متحدہ عرب امارات نے 2011 کے بعد سے عالمی سطح پر تعلیمی منصوبوں کے لئے 1 ارب 55 کروڑ ڈالر کی امداد فراہم اور یونیسیف اور دیگر شراکتی اداروں کے ساتھ مل کر 2017 سے اب تک 59 ممالک میں 2کروڑ بچوں کی تعلیم کے لئے امداد فراہم کی ۔ صرف موصل اور بغداد میں ہی 2019 میں 16 اسکولوں کو دوبارہ تعمیر کرایا۔ متحدہ عرب امارات نے 2019 میں بچوں کے خلاف کاروائیوں اور اسکولوں پر ہونے والے حملوں پر گہری تشویش کا اظہار کیا۔ ان حملوں سے اساتذہ اور طلبہ کی زندگیاں خطرے سے دوچار رہیں ۔ دہشت گرد اور غیر ریاستی مسلح گروہ اکثر اسکولوں اور اساتذہ پر حملہ کرتے ہیں تاکہ آبادی میں خوف و ہراس پھیل سکے متحدہ عرب امارات کا موقف ہے کہ اس طرح کی سنگین خلاف ورزیوں میں ملوث عناصر کو جوابدہ ٹھہرایا جائے۔ یمن میں جائز حکومت کی مدد کے لئے قائم اتحاد کے دیگر شراکت داروں کے ساتھ تعاون کرتے ہوئے متحدہ عرب امارات نے سلامتی کونسل کی متعلقہ قراردادوں پر عمل درآمد کے لئے ٹھوس اقدامات اٹھائے ہیں۔ جن میں چائلڈ پروٹیکشن یونٹ کا قیام اور سیکرٹری جنرل کے نمائندہ خصوصی برائے چلڈرن و مسلح تصادم کے ساتھ مفاہمت کی یادداشت پر دستخط بھی شامل ہیں۔ ترجمہ۔تنویرملک http://www.wam.ae/en/details/1395302869354

WAM/Urdu