منگل 24 نومبر 2020 - 8:00:16 شام

متحدہ عرب امارات  رواداری سےعالمی مسائل کے حل کیلئے کام کررہا ہے: نھیان بن مبارک


ابوظبی، 13 نومبر ، 2020 (وام) ۔۔ وزیر رواداری اور بقائے باہمی شیخ نھیان بن مبارک آل نھیان نے کہا ہے کہ متحدہ عرب امارات رواداری اور انسانی رابطوں کے ذریعے بڑے عالمی چیلنجوں کو حل کرنے کیلئے بین الاقوامی شراکت داروں کے ساتھ مل کر کام کر رہا ہے۔ وزارت کے زیر اہتمام رواداری اور بقائے باہمی کے قومی میلے کے تحت "آئندہ 50 سالوں کے لئے رواداری اور تیاری" کے موضوع پر منعقدہ ایک ورچوئل پینل مباحثے سے خطاب کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ ہم ایک جڑی ہوئی دنیا میں رہتے ہیں۔ یہ ہماری ذمہ داری ہے کہ ہم ایک دوسرے کو جوڑیں اور باقی ساری دنیا کو اس میں شامل کریں۔ عالمی سطح پر مشہور فکر اور روحانی پیشواؤں کے ساتھ ساتھ امن، رواداری اور بقائے باہمی کے حامیوں نے بھی اس پروگرام میں شرکت کی جو اس سال COVID-19 وباء کی وجہ سے ورچول طور پر ہورہا ہے۔ شیخ نھیان نے کہا کہ ہم اس بات پر یقین رکھتے ہیں کہ ایک مستحکم عالمی معاشرہ عالمی اخلاقی اقدار اور سب کی مشترکہ خوبیوں کو قبول کرتا ہے۔ رواداری اور بقائے باہمی کی یہ آفاقی اقدار ہمیں ایک دوسرے سے بات کرنے اور اپنے اختلافات کو سمجھنے، سراہنے اور ان کا احترام کرنے کے قابل بناتی ہیں۔ انھوں نے کہا کہ رواداری دیانتدار اور پراعتماد بات چیت کے قابل بناتی ہے اور باہمی افہام و تفہیم اور احترام کا باعث بنتی ہے۔ رواداری ہمیں اپنے عالمی معاشرے کی معاشی اور معاشرتی بہبود کو بہتر بنانے کے لئے مل کر کام کرنے کا اہل بناتی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ وزارت رواداری اور ہم آہنگی اس سالانہ تہوار کا اہتمام شیخ زاید مرحوم کے نقش قدم پر چلتے ہوئے منارہی ہے۔ انھوں نے کہا کہ ہماری قوم کے بانی شیخ زاید بن سلطان آل نھیان ایک تاریخی رہنما تھے جن کی دانشمندی اور وژن نے یہ ظاہر کیا کہ سوچ اور مل کر کام کرنے سے ہم اجتماعی مسائل حل ہوسکتے ہیں۔ ترجمہ: ریاض خان ۔ http://www.wam.ae/en/details/1395302886097

WAM/Urdu