پیر 18 جنوری 2021 - 2:06:08 صبح

جی 20 سربراہ کانفرنس کا انعقاد غیر معمولی حالات میں ہوا : مریم المھیری


ابوظہبی ، 23 نومبر ، 2020 (وام) ۔۔ رواں سال جی 20 سربراہ اجلاس غیرمعمولی حالات میں منعقد ہوا اور اس کی میزبانی کا اعزاز متحدہ عرب امارات کے برادر ہمسائیہ ملک سعودی عرب کو ملا ، کووڈ 19 کے ایسے حالات میں ممالک کے درمیان مل کر کام کرنے اور قوی ترین بین الاقوامی تعاون تشکیل دینے کی ضرورت پھر سے سامنے آئی ۔ ان خیالات کا اظہار وزیر مملکت برائے فوڈسکیورٹی مریم حارب المھیری نے کیا – ان کا کہنا تھا کہ کورونا وائرس کی غیر یقینی صورتحال نے اقوام متحدہ کے پائیدار ترقیاتی اہداف کے حصول پر سوال اٹھادیا ہے خصوصا 2030 سے دنیا سے بھوک کا خاتمہ کردینے کے ہدف پر غالبا دوبارہ غور کرنا ہوگا ، اس صورتحال کے نتیجہ میں فوڈ سکیورٹی اب وہ اہم ترین موضوع بن گیا ہے جس میں بین الاقوامی تعاون کو لازمی تقویت اور وسعت دینے کی ضرورت ہے ، 2030 کے تمام ایجنڈا میں عالمی فوڈ سکیورٹی کو لازمی بنانا شامل کرنا ہوگا ۔ انہوں نے کہا کہ وائس کی اس عالمی وباء نے ممالک کی فوڈ سکیورٹی کیلئے صلاحیت کو بڑھانے کی اہمیت بہت زیادہ کردی ہے تاکہ مستقبل میں ایسے کسی بھی بحران میں اس صورتحال سے موثر انداز میں نمٹا جاسکے – المھیری نے کہا کہ زرعی ٹیکنالوجی میں علم ، مہارت اور تجربات کا تبادلہ کرکے ہم دنیا میں فوڈ سکیورٹی کا موثر ایکو سسٹم قائم کرسکتے ہیں تاکہ مقامی پیداوار بڑھائی جاسکے ، آبی تحفظ کو فروغ دے کر وسائل استعمال میں بچت کی جائے اور عالمی فوڈ چینز پر انحصار کم کیا جائے جوکہ عالمی وباءکی وجہ سے شدید متاثر ہوا ہے – انہوں نے کہا کہ موجودہ عالمی حالات میں فوڈ سکیورٹی کیلئے جو چھوٹا سا اشارہ سامنے آیا ہے وہ ہمارے لیئے انتباہ ہے اور یہ اس بات کا متقاضی ہے کہ ہمیں فوڈ سکیورٹی میں نیا منظر اور ماحول بنانا ہوگا ، خوراک کی آزادانہ بین السرحدی نقل و حمل ، خوراکی ضیاع کو روکنا اور غذا میں خود کفالت اس کے مرکزی موضوعات ہیں – ترجمہ ۔ تنویر ملک – http://www.wam.ae/en/details/1395302889257

WAM/Urdu