منگل 26 جنوری 2021 - 7:08:46 صبح

متحدہ عرب امارات اور برطانیہ کی منی لانڈرنگ اور دہشتگردوں کی مالی اعانت روکنے پر ورکشاپ


ابوظبی، 23 ،نومبر 2020 (وام) ۔۔ متحدہ عرب امارات اور برطانیہ کے حکام نے انسداد منی لانڈرنگ اور دہشتگردی کی مالی اعانت کا مقابلہ کرنے سے متعلق مشترکہ ورکشاپ میں حصہ لیا۔ ورچول طور پر منعقدہ اس ورکشاپ کا مقصد سرحد پار تعاون اور سرکاری اورنجی شعبے کی کوآرڈنیشن کے ذریعے مالی جرائم کا مقابلہ کرنے کیلئے دوطرفہ کوششوں کو تقویت دینا ہے۔ متحدہ عرب امارات کے شرکاء میں وزارت خارجہ اور بین الاقوامی تعاون ، وزارت اقتصادیات ، وزارت داخلہ ، وزارت انصاف ، سنٹرل بینک ، فیڈرل کسٹم اتھارٹی ، قومی انسداد منی لانڈرنگ کے ایگزیکٹو آفس، دہشتگردی کی مالی اعانت کے انسداد کی تنظیماتی کمیٹی اور امارت اور وفاقی سطح پر قانون نافذ کرنے والے دیگر اداروں کے نمائندے شامل تھے۔ برطانیہ کی جانب سے ریونیو اینڈ کسٹمز ، خزانے اور داخلہ کی وزارتوں، نیشنل اکنامک کرائم سینٹر، یوکے سنٹرل اتھارٹی اور کراؤن پراسیکیوشن سروس کے نمائندے شامل تھے۔ ورکشاپ کے دوران شرکاء نے باہمی دلچسپی کے متعدد اہم امور پر تبادلہ خیال کیا جن میں متحدہ عرب امارات کی ہائر کمیٹی برائے انسداد منی لانڈرنگ کے لئے قومی حکمت عملی کی نگرانی اور دہشتگردی کی مالی اعانت سے مقابلہ کرنے کے لئے پیشرفت اور ترجیحات کے بارے میں اپ ڈیٹ، منی لانڈرنگ اور دہشتگردی کی مالی اعانت سے نمٹنے کی برطانوی حکمت عملی اور مستقبل میں تعاون اور معلومات کے تبادلے شامل ہیں۔ اپنے افتتاحی کلمات میں وزارت خارجہ اور بین الاقوامی تعاون کے اقتصادی و تجارتی امور کے محکمہ کی ڈائریکٹر آمنہ فکری نے کہاکہ متحدہ عرب امارات کی حکومت میں انتہائی اعلی سطح پر اس بات کا ادراک ہے کہ ، منی لانڈرنگ کے انسداد اور دہشتگردی کی مالی اعانت روکنے کیلئے تعاون مزید بہتر بنانے کی ضرورت ہے۔ انھوں نے کہا کہ ہمیں یقین ہے کہ ہم منی لانڈرنگ کے انسداد اور دہشتگردی کی مالی اعانت روکنے کے حوالے سے برطانیہ کے تجربے سے بہت کچھ سیکھ سکتے ہیں اور ہمارے دونوں ممالک کے لئے تجربات اور بہترین طریقوں کا تبادلہ بہت اہم ہے۔ یہ ورکشاپ متحدہ عرب امارات کی طرف سے منی لانڈرنگ اور دہشتگردی کی مالی اعانت سے نمٹنے کے قومی عزم کی عکاس ہے۔ بینکنگ ، تجارت اور سرمایہ کاری کے علاقائی مرکز کے طور پر متحدہ عرب امارات میں حالیہ برسوں میں منی لانڈرنگ کے انسداد اور دہشتگردی کی مالی اعانت روکنے کی سرگرمیوں میں اضافہ ہوا ہے۔ ترجمہ: ریاض خان ۔ http://www.wam.ae/en/details/1395302889284

WAM/Urdu