پیر 18 جنوری 2021 - 1:51:25 صبح

امارات نیوکلیئر انرجی کارپوریشن کا ورچوئل فورم ، متعلقہ فریق اداروں کے تعاون کو ستائش


ابوظہبی ، 25 نومبر ، 2020 (وام) ۔۔ امارات نیوکلیئر انرجی کارپوریشن ، اینک کی میزبانی میں متعلقہ فریقین کا ورچوئل فورم ہوا جس میں براکۃ نیوکلیئر انرجی پلانٹ سے متعلق تازہ ترین اپ ڈیٹ پیش کرتے ہوئے متعلقہ شعبے میں مختلف پہلوؤں سے متعلق اماراتی اداروں کے درمیان جاری تعاون کی مشترکہ کامیابی کو بھی منایا گیا - یہ ایونٹ اینک کی ان کاوشوں کا بھی حصہ ہے جو کہ وہ متعلقہ فریقین کے درمیان کثیر الجہتی اور اہم تعاون و کردار کو تسلیم کرنے کیلئے انجام دی جاتی ہیں ، اس میں کلیدی حکومتی اداروں سے لیکر ریگولیٹری اتھارٹیز ، میڈیا تنظیمیں اور تعلیمی ادارے شامل ہوتے ہیں ۔ اینک اور اس کے متعلقہ فریقین کے درمیان موثر تعاون سے سال بھر کے دوران قابل قدر کلیدی سنگ میل حاصل ہوئے اور نیوکلیئر پلانٹ کی مسلسل ترقی جاری رہی ، وہ اس تمام تر عمل کے دوران کووڈ 19 کی عالمی وباء سے بچاؤ کے چیلنج سے عہدہ برآ بھی ہوئے – ورچوئل فورم کا آغاز اینک کے سی ای او محمد ابراھیم الھمادی نے کیا اور انہوں نے اینک کی 2020 میں کامیابیوں پر روشنی ڈالی جبکہ اینک کے ماہرین کی پریزنٹیشنز ہوئیں اور براہ راست سوال و جواب کے سیشن بھی ہوئے – الھمادی نے فورم کے شرکاء کا خیرمقدم کیا اور کہا کہ متحدہ عرب امارات کے پرامن جوہری پروگرام کی کامیابی ان متعلقہ فریقین کی حمایت ، لگن اور مہارت کے بغیر ممکن نہیں تھی ، ایک دہائی کی ایسی کاوشوں کے نتیجے میں یہ عظیم الشان منصوبہ بنا جس سے ملک کو سماجی ، اقتصادی اور ماحولیاتی فوائد حاصل ہونگے اور یہ سلسلہ آنے والی دہائیوں تک جاری رہے گا ۔ انہوں نے کہا کہ کووڈ 19 کے غیر معمولی حالات میں مسلسل کامیابی کا عمل یقیننا قابل ستائش ہے جس میں حفاظت اور سلامتی کے تمام مسلمہ بین الاقوامی معیار اور تقاضے بھی پورا کیئے گئے – اینک نے 2009 سے اپنے قیام کے بعد سے کئی اہم متعلقہ فریقین اداروں کے ساتھ شراکت داری انجام دی ، حال ہی میں ابوظہبی ٹرانسمیشن اینڈ ڈسپیچ کمپنی ٹرانسکو کے ساتھ مل کر براکۃ پلانٹ کے یونٹ 1 کو ملک کے قومی گرڈ سے منسلک کیا گیا اور اس اہم کام کی کامیابی کو ایشیئن پاور ایوارڈز 2020 میں تسلیم کرتے ہوئے اس منصوبہ کو ٹرانسمیشن اینڈ ڈسٹری بیوشن پراجیکٹ کی درجہ بندی میں گولڈ ایوارڈ دیا گیا – براکۃ پلانٹ دنیا میں جوہری توانائی کے سب سے بڑے منصوبوں میں شامل ہے جس میں اے پی آر 1400 کے چار یونٹس ہیں ، اسکی تعمیر 2012 میں شروع ہوئی ، اس کے یونٹ 3 اور 4 کی تعمیر بالترتیب 93 اور 87 فیصد مکمل ہوچکی ہے جبکہ اسکے یونٹ 1 اور 2 کی تعمیر کے دوران حاصل ہونے والے تجربات کو باقی ماندہ عمل پر لاگو کرکے مزید کامیابی حاصل کی گئی ، براکۃ کا پلانٹ مجموعی طور پر 95 فیصد مکمل ہوچکا ہے – جب اس کے چاروں ری ایکٹر آن لائن ہوجائیں گے تو یہ پلانٹ صاف ، شفاف اور قابل اعتماد بجلی کی ترسیل کا باعث ہوگا اور متحدہ عرب امارات کو آنے والی دہائیوں تک اس کے فوائد اور ثمرات میسر رہیں گے ، یہ پلانٹ ملک کی مجموعی بجلی طلب کا 25 فیصد پورا کرے گا جبکہ اس سے سالانہ 21 ملین ٹن فضائی آلودگی کو روکنے میں مدد ملے گی – ترجمہ ۔ تنویر ملک – http://www.wam.ae/en/details/1395302889924

WAM/Urdu