بدھ 20 جنوری 2021 - 1:35:55 شام

شارجہ نیشنل آئل کارپوریشن نے گیس ذخیرہ کرنے کے نئے منصوبے کا اعلان کردیا

  • مؤسسة نفط الشارقة الوطنية "سنوك" تطلق مشروعاً رائداً لتخزين الغاز
  • مؤسسة نفط الشارقة الوطنية "سنوك" تطلق مشروعاً رائداً لتخزين الغاز
  • مؤسسة نفط الشارقة الوطنية "سنوك" تطلق مشروعاً رائداً لتخزين الغاز

شارجہ، 6 جنوری، 2021 (وام) ۔۔ شارجہ نیشنل آئل کارپوریشن (ایس این او سی) نے گیس ذخیرہ کرنے کا نیا منصوبہ شروع کرنے کا اعلان کیا ہے۔ یہ موجودہ انفراسٹرکچر کا استعمال کرتے ہوئے چھوٹے پیمانے پر پائلٹ مرحلہ ہے جو 2017 سے چل رہا ہے۔ یکم جنوری 2021 کو منصوبے کو پہلی گیس متعارف کروائی گئی جو ایس این او سی کے لئے ایک نئے دور کی علامت ہے۔ یہ منصوبہ اپنے مقررہ وقت اور بجٹ پر دسمبر 2019 میں ای پی سی معاہدے کے بعد سے ایک سال کے اندر مکمل ہوا ہے۔ ایس این او سی اس منصوبے کی تکمیل کے ساتھ کاروبار کے ایک نئے شعبے میں داخل ہوگا اور شارجہ کی گیس کی فراہمی اور طلب میں توازن قائم کرنے اور شارجہ کے بجلی کے شعبے میں فراہمی کی مطلوبہ لچک کو پورا کرنے میں مدد کرے گا۔ ایس این او سی کے سی ای او حاتم الموسٰی نے کہا کہ اس منصوبے کی تکمیل COVID-19 وبائی بیماری کے باعث پیش آنے والے مقامی اور بین الاقوامی سپلائی چین چیلنجوں میں ایک شاندار کامیابی ہے۔ انھوں نے کہا کہ اس منصوبے کا بروقت آغاز ایس این او سی کے لئے کاروباری ترقی کی ایک بڑی سرگرمی ہے۔ اس سے ہمیں موسم سرما میں زیادہ سے زیادہ گیس ذخیرہ کرنے میں مدد ملے گی تاکہ موسم گرما میں زیادہ طلب کو پورا کیا جاسکے۔ انھوں نے کہاکہ اس کے ساتھ توانائی کی حفاظت کے لئے آسانی سے دستیاب اسٹریٹجک ریزرو مہیا ہوسکے گا جس سے ہمیں غیر متوقع طور پر آپریشنل یا مارکیٹ مسائل سے نمٹنے میں مدد ملے گی۔ اس منصوبے میں ہائی پریشر (HP) گیس کمپریشن یونٹ، HP گیس پائپ لائن، افادیت اور معاون سہولیات، موجودہ پلانٹ اور کنوؤں میں میٹرنگ اور tie-insکی تنصیب شامل ہے۔ انھوں نے کہا کہ ہم اسے عالمی معیار کے تکنیکی اور حفاظتی معیارات کے ساتھ مکمل طور پر خود کار طریقے سے چلائیں گے۔ انکا کہنا تھا کہ نیا انفراسٹرکچر مستقبل کی توسیع کو مدنظر رکھتے ہوئے ڈیزائن کیا گیا ہے۔ شارجہ نیشنل آئل کارپوریشن 2010 میں شارجہ کے حکمران کے ایک امیری فرمان کے ذریعے قائم کی گئی تھی اور اسے امارت کے توانائی کے اثاثوں کی کھوج، پیداوار، انجینئرنگ، تعمیر، آپریشن اور دیکھ بھال کا کام سونپا گیا ہے۔ نئے مہانی فیلڈ کے علاوہ ایس این او سی 50 سے زیادہ کنوؤں، ایک گیس پروسیسنگ کمپلیکس اور 2 ہائیڈرو کاربن مائع اسٹوریج اور ایکسپورٹ ٹرمینلز کی مالک ہے۔ ترجمہ: ریاض خان ۔ http://www.wam.ae/en/details/1395302899892

WAM/Urdu