بدھ 20 جنوری 2021 - 2:56:34 شام

دبئی نے معاشی محرک پیکج بڑھا کر7.1ارب درہم کردیا


ابوظبی، 6 جنوری، 2021 (وام) ۔۔ نائب صدر، وزیر اعظم اور دبئی کے حکمران شیخ محمد بن راشد آل مکتوم کی ہدایت پر دبئی کے ولی عہد اور دبئی ایگزیکٹو کونسل کے چیئرمین شیخ حمدان بن محمد بن راشد آل مکتوم نے 315 درہم ملین کے اقتصادی محرک پیکج کا آغاز کیا ہے۔ نئے پیکیج کے ساتھ امارت کی طرف سے پیش کردہ کاروباری مراعات کے پیکج کی کل مالیت 7.1 ارب درہم تک بڑھ گئی ہے۔ نیا محرک پیکیج لانچ کرنے کا فیصلہ دبئی کی اکانومی سپورٹ کمیٹی کی سفارشات پر مبنی ہے جس کی سربراہی ایگزیکٹو کونسل کے دوسرے نائب چیئرمین شیخ احمد بن سعید آل مکتوم کررہے ہیں۔ اس کا مقصد دبئی میں تمام معاشی اور کاروباری شعبوں کی حمایت جاری رکھنا ہے۔ 315 ملین درہم کے پیکیج سے پچھلے محرک پیکجوں میں اعلان کردہ کچھ اقدامات کو جنوری 2021 سے جون 2021 تک مزید چھ ماہ کے لئے بڑھانے میں مدد ملے گی۔ پیکج پر تبصرہ کرتے ہوئے شیخ حمدان نے کہا کہ دبئی حکومت موجودہ عالمی معاشی صورتحال اور متعدد پیشرفتوں کا جائزہ لیتے ہوئے ایسی حکمت عملی تیار کرے گی جو ہمیں معیشت پر عالمی وبائی بیماریوں کے اثرات کو مؤثر طریقے سے کم کرنے کے قابل بنائے گی۔ انہوں نے کہا کہ عالمی بحران کے اثرات کو کم کرنے، معاشی شعبوں کی بحالی کی رفتار تیز کرنے اور کاروباری تسلسل کو یقینی بنانے کے لئے ضروری وسائل مہیا کرنے کے لئے حکومتی کوششیں شیخ محمد بن راشد آل مکتوم کی ہدایت کے مطابق ہیں۔ انھوں نے کہا کہ دنیا بھر میں وباء کے باعث پیدا ہونے والے چیلنجوں کے باوجود ہماری معیشت مستحکم ہو رہی ہے۔ ہمارے پاس ایسی صلاحیتیں اور وسائل موجود ہیں جو ہمیں معاشی استحکام حاصل کرنے اور اپنے مختلف کاروباری شعبوں کی بحالی تیز کرنے کے قابل بناتے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ ہمیں یقین ہے کہ اگلا مرحلہ کاروباری افراد اور سرمایہ کاروں کیلئے نئے مواقع لائے گا۔ شیخ حمدان کے منظور کردہ محرک پیکیج میں شامل اقدامات میں ان تجارتی اداروں اور ہوٹلوں کو 2021 کے دوران ایک بار مارکیٹ فیس سے مستثنیٰ قرار دینا شامل ہے جنہیں 2020 میں اعلان کردہ پیکیجوں میں کمی سے فائدہ نہیں ہوا تھا۔ انہوں نے ہدایت کی کہ بیچ سے دور ہوٹلوں اور ان کے ریستورانوں کو ہوٹل سیلز فیس کے ساتھ ساتھ ٹورزم درہم فیس کا50فیصد واپس کیا جائے۔ سیاحت، تفریح ​​اور پروگراموں کے شعبے میں کانفرنسوں اور نمائشوں سمیت تفریحی اور کھیلوں کے پروگراموں اور سرگرمیوں کو ملتوی کرنے اور منسوخی کرنے کے لئے وصول کی جانے والی فیسوں میں چھوٹ میں توسیع کردی گئی ہے۔ نئے پیکیج میں ٹکٹوں کی فروخت، اجازت نامے جاری کرنے اور تفریحی اور کاروباری ایونٹس پر عائد دیگر سرکاری فیسوں کے لئے معاوضے کی فیسوں میں بھی توسیع کردی گئی ہے۔ منظور شدہ اقدامات کے مطابق لیز معاہدوں کی لازمی تجدید کے بغیر تجارتی لائسنس کی تجدید بھی کی جاسکتی ہے۔ اس پیکیج میں لائسنسنگ فیس اور ہر ماہ لائسنس کی تجدید کی قسطوں کو قبول کرنے کے لئے 25 فیصد ڈاؤن پیمنٹ کی ضرورت کو منسوخ کرنا بھی شامل ہے۔ مزید برآں نالج فنڈ اسٹیبلشمنٹ کی جانب سے اراضی پر بہت سے لیز حاصل کرنے والی نرسریوں کو اراضی کے کرایے میں 50فیصد کمی سے فائدہ حاصل ہوتا رہے گا۔ ترجمہ: ریاض خان ۔ http://www.wam.ae/en/details/1395302899900

WAM/Urdu