جمعہ 24 ستمبر 2021 - 6:56:47 شام

' سو ملین کھانے ' مہم کے تحت موریطانیہ میں 45 لاکھ کھانوں کی تقسیم


دبئی ، 14 ستمبر ، 2021 (وام) ۔۔ خطے میں اپنی نوعیت کی سب سے بڑی غذائی تقسیم کے امدادی اقدام " سو ملین کھانے " کی جاری مہم کے دوران موریطانیہ میں محروم طبقہ کے تقریبا 92 ہزار گھرانوں اور افراد کو تقریبا 45 لاکھ کھانے میسر آئے ۔ اس مہم میں افریقہ ، ایشیاء ، یورپ اور جنوبی امریکا کے 30 ممالک میں غذائی امداد بہم پہنچائی جانی ہے – اس امدادی مہم سے مستفید ہونے والوں کا تعین مقامی اتھارٹیز کے ڈیٹا بیس سے کیا جاتا ہے اور انہیں چاول ، چینی ، خوردنی تیل ، کھجور اور آٹا کو باآسانی سٹور کیئے جانے والے انداز میں فوڈ پارسلز سے دیا جاتا ہے – اس مہم کے منتظم کار ، محمد بن راشد المکتوم گلوبل انیشیٹو ، ایم بی آر جی آئی نے اس کو انجام دینے میں فوڈ بنکنگ ریجنل نیٹ ورک ، ایف بی آر این اور دیگر کئی مقامی اتھارٹیز کا تعاون حاصل کیا تاکہ غذائی امدادی کی تقسیم کاری کو موثر اور فوری انداز میں انجام دیا جاسکے ۔ دیگر معاون فورمز میں یوتھ ایسوسی ایشن فار ہیومینیٹرین ایکشن اینڈ ڈویلپمنٹ ، الرحمۃ ایسوی ایشن اور موریطانیہ کی تنظیم برائے ترقی و پیشرفت شامل ہیں – ایم بی آر جی آئی کی ڈائریکٹر سارا النوعیمی کا کہنا تھا کہ سو ملین کھانے کی یہ مہم ضرورتمند افراد کی معاونت کیلئے ہے اور کووڈ 19 جیسے حالات میں بحران و دیگر مشکلات سے دوچار لوگوں سے یکجہتی کو فروغ دینے کیلئے ہے – ان کا کہنا تھا کہ بھوک ، انسانیت اور غذائی عدم تحفظ نے دنیا بھر میں 821 ملین افراد کی زندگیوں کو شدید خطرات لاحق کررکھے ہیں ، ترقی پذیر معاشروں میں اس سے نمٹنے کیلئے ٹھوس تعاون بہت ضروری ہے ، سو ملین کھانے کی اس مہم کی کامیابی ، عالمی اور علاقائی سطح اور مقامی سطح کے شراکت داروں کے تعاون کے بغیر ممکن نہیں تھی ، اس عمل میں مذکورہ تیس ممالک سے رضاکاروں کا بھی تعاون بہت معاون رہا – ایف بی آر این کے شریک بانی معز الشھدی کا کہنا تھا کہ موریطانیہ کے فوڈ بنک ، حکومتی ملازمین اور عالمی اداروں اور کمپنیوں کے رضاکاروں کے تعاون سے 15 ہزار رجسٹرڈ گھرانوں میں 420 ٹن غذائی امداد تقسیم کی گئی ۔ اس عمل میں سول سوسائٹی کا تعاون بھی شامل حال رہا ، اس تمام تر عمل میں عالمی وباء کے حالات میں بھوک سے نمٹنے اور کم غذایئت کا شکار لوگوں کی غذائی مدد کیلئے خاطر خواہ کام کیا گیا – سو ملین کھانوں کی یہ مہم اپنے ہدف سے دگنا سے بھی زیادہ کام کرچکی ہے جس میں متحدہ عرب امارات سے افراد ، اداروں ، کاروباری برادری اور فلاحی کاروں نے بڑھ چڑھ کر حصہ ڈالا اور 216 ملین کھانوں کا انتظام ہوا – یہ مہم انسانی ہمدردی اور ریلیف امداد کے تحت ہے جوکہ ایم بی آر جی آئی کے پانچ کلیدی ستوں میں شامل ہے – ترجمہ ۔ تنویر ملک – http://wam.ae/en/details/1395302969779

WAM/Urdu