اتوار 19 ستمبر 2021 - 6:34:38 صبح

وزارت ماحولیات نےماہی گیری کشتیوں کیلئے نئے لائسنس جاری کرنے کی قرارداد جاری کردی

  • 281696396359394065
  • 2845932581645834079

دبئی، 15ستمبر2021 (وام): وزارت موسمیاتی تبدیلی اور ماحولیات نے ماہی گیری کی کشتیوں کو نئے لائسنس جاری کرنے کے بارے میں 2021 کی وزارتی قرارداد نمبر 212 جاری کی ہے۔ مقامی ماہی گیری کے شعبے کو فروغ دینے کے لیے وزارت کی کوششوں کے مطابق یہ قرارداد مؤثر طریقے سے موجودہ لائسنسوں کو متوازی مارکیٹ میں بہت زیادہ قیمتوں پر تجارت کرنے کے مسئلے کو حل کرتی ہے۔ نئی قرارداد ماہی گیری کی کشتیوں کی رجسٹریشن کی عارضی معطلی پر 2013 کے وزارتی فرمان نمبر 372 کو معطل کرتی ہے اور نئے آنے والوں کو نئے لائسنس جاری کر کے ماہی گیری کے شعبے میں داخل ہونے کا موقع فراہم کرتی ہے ۔ موسمیاتی تبدیلی اور ماحولیات کے وزیر ڈاکٹر عبداللہ بلحیف النعیمی نے کہاکہ انکی وزارت ماہی گیری کے پیشے کے تسلسل کو برقرار رکھنے ، اماراتی باشندوں خاص طور پر نوجوانوں کو اس شعبے کی طرف راغب کرنے، مقامی ماہی گیروں کے لیے بہترماحول بنانے کو یقینی بنانے کے لیے پرعزم ہے۔ انہوں نے کہا کہ اپنی کوششوں سے آگاہ کرنے کے لیے ہم متعلقہ مقامی حکومتی اداروں ، زندہ آبی وسائل کی ترقی اور تحفظ اور ملک بھر کے ماہی گیروں کے ساتھ باقاعدہ ملاقاتیں کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس طرح اہم شعبے کو درپیش چیلنجوں کے بارے میں ہمیں آگاہی ملتی ہےاور ہم اس شعبے کی ترقی کے لیے منصوبے اور اقدامات وضع کر سکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ انکی وزارت نے مقامی حکومتی اداروں کے ساتھ مل کر کام کیا تاکہ اس بات کو یقینی بنایا جا سکے کہ ماہی گیری کے نئے لائسنسوں کا مسئلہ ماہی گیری کے ذخائر کو ختم نہ کر دے۔ وزارت نے ہر امارت میں متعلقہ ایجنسیوں کے ساتھ مل کر متحدہ عرب امارات میں لائسنس یافتہ ماہی گیری کشتیوں کی فہرست کا جائزہ لیا اور ماہی گیری کے پیشے پر عمل کرنے میں ان کے مالکان کی کارکردگی کا تعین کیا۔ انہوں نے کہا کہ اسکے نتیجے میں غیر فعال لائسنس منسوخ کردیئے گئے اور نئے اہل امیدواروں کو لائسنس جاری کیے جارہے ہیں۔ قرارداد کے تحت اہلیت کا معیار یہ ہے کہ درخواست دہندگان متحدہ عرب امارات کے شہری ، کشتی چلانے کے لیے طبی طور پر فٹ اور متعلقہ مقامی حکومتی اداروں کے لائسنس یافتہ ہوں۔ انہیں ماہی گیری کا لائسنس حاصل کرنے کے لیے ایک ٹیسٹ اور فشنگ بوٹ کے لیے ڈرائیونگ ٹیسٹ بھی پاس کرنا ہوگا۔ مزید یہ کہ امیدوار نہ تو وزارت کے ساتھ رجسٹرڈ ہوں نہ ہی پہلے سے ماہی گیری کی کشتی کا لائسنس رکھتے ہوں۔ انہیں وزارت کے ساتھ رجسٹرڈ اور متعدد ماہی گیری کشتیوں کے لائسنس رکھنے والے افراد کارشتہ دار نہیں ہونا چاہیے اور انہیں قانون کے ذریعے اجازت دی گئی طریقوں سے خود ماہی گیری کی مشق کرنی چاہیے۔ وزارت اس بات کو یقینی بنانا چاہتی ہے کہ تمام لائسنس رکھنے والے اس شعبے میں فعال طور پر حصہ ڈالیں اور ملک کے تحفظ خوراک کے عمل کو مضبوط بنانے میں اس کے کردار کو بڑھانے میں مدد کریں۔ جاری کردہ لائسنسوں کے زیادہ سے زیادہ استعمال کی ضمانت کے لیے حکام کشتیوں کی نقل و حرکت پر نظر رکھیں گے۔ ترجمہ: ریاض خان ۔ http://wam.ae/en/details/1395302970305

WAM/Urdu